اسکول میں ایسا کیا ہوا کہ 18 سال قبل بچھڑی بہن مل گئی!

کیپ ٹاؤن -غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق عدالت سے سزا پانے والی اس خاتون نے 1997ء میں کیپ ٹاؤن کے ایک میٹرنٹی ہوم سے ایک بچی کو اغواء کر لیا تھا۔ یہ معاملہ اس وقت سامنے آیا گزشتہ برس ایک سکول دو طالبات نے داخلہ لیا جن کی شکلیں ہو بہو ایک جیسی تھیں۔ یہ بات رفتہ رفتہ اس طالبہ کے والدین تک پہنچی، جن کی نومولود بیٹی 18 برس قبل ایک ہسپتال سے چرا لی گئی تھی۔ ڈی این اے ٹیسٹ کی رپورٹس سے پتہ چلا کہ دونوں لڑکیاں حقیقی بہنیں ہیں اور اس طرح بچپن میں ہوئے اس اغواء کا راز فاش ہو گیا۔ تاہم ملزمہ نے اس بچی کے اغواء سے انکار کرتے ہوئے کہا ہے کہ بچی کو ایک ریلوے سٹیشن پر اس کے حوالے کیا گیا تھا۔ خبروں کے مطابق زیفینی نامہ طالبہ نے اپنے حقیقی والدین کے بجائے اسی والد کے ساتھ رہنے کا فیصلہ کیا ہے جس نے اسے پالا تھا۔ پہلے یہ سزا چودہ سال مقرر کی گئی تھی تاہم بعد میں چار سال کم کرتے ہوئے اب دس برس قید کی سزا سنائی گئی ہے۔ استغاثہ نے اس اکیاون سالہ خاتون کے لیے پندرہ سال قید کی سزا کا مطالبہ کیا تھا :-

اپنی رائے کا اظہار کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *