خیبر ایجنسی: ایک سالہ بچی میں پولیو وائرس کی تشخیص

karachi-liyari_400

قبائلی ایجنسی خبیر کے علاقے ملک دن خیل میں ایک سالہ بچی میں پولیو کے پی ون وائرس کی تشخیص ہوگئی ہے۔

اس تازہ ترین کیس کے بعد خیبر میں پولیو کیسز کی تعداد 8 پوگئی ہے جو پورے فاٹا میں سب سے زیادہ ہے۔

اس علاقے میں گزشتہ تین سالوں سے کرفیو نافذ ہے جسکی وجہ سے ویکسینیشن ٹیمیں یہاں پہنچ نہیں پاتیں۔

دوسری جانب قبائلی علاقوں میں انسداد پولیو مہم کو شدت پسندوں کی مخالفت کا بھی سامنا ہے جبکہ پولیو ٹیموں پر متعددحملےبھی کیے جاچکے ہیں جن میں کئی افراد مارے گئے ہیں۔

طالبان کا ماننا ہے کہ عالمی اداروں کے اشتراک سے جاری اس مہم کا مقصد علاقے کی جاسوسی ہے۔

پاکستان کو پولیو سے پاک کرنے کی مہم کو گزشتہ کئی سالوں سے رکاوٹوں کا سامنا ہے کیونکہ یہاں کے قدامت پسند معاشرے میں خیال کیا جاتا ہے کہ مہم کی آڑ میں مسلمان آبادی کنڑول کرنے کی کوشش کی جا رہی ہے۔

خیال رہے کہ پاکستان، نائجیریا اور افغانستان دنیا کے تین ایسے ممالک ہیں، جہاں پولیو ابھی تک موذی مرض کے طور پر برقرار ہے۔

اقوام متحدہ کے مطابق پاکستان میں 2011 میں پولیو کے 198 کیس سامنے آئے جو کہ ایک دہائی سے زائد عرصے میں سب سے زیادہ سامنے آنے والے اعداد و شمار تھے اور یہ دنیا میں کسی بھی ملک کے مقابلے میں سب سے زیادہ کیسز تھے۔

اپنی رائے کا اظہار کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *