طاہر القادری نے کارکنوں کو پارلیمنٹ کے محاصرے کا حکم دے دیا

Tahir-ul-QadriImran-Khanپاکستان عوامی تحریک کے سربراہ ڈاکٹر طاہر القادری نے کارکنوں کو پارلیمنٹ ہاؤس سے کسی کو باہر جانے یا اندر آنے دینے سے روک دیا۔

پارلیمنٹ ہاؤس اسلام آباد کے باہر پاکستان عوامی تحریک کے کارکنوں سے خطاب کرتے ہوئے ڈاکٹر طاہر القادری کا کہنا تھا کہ پاکستان کی پارلیمنٹ اور حکومت جعلی اورغیر آئینی ہے،آرٹیکل 62اور63کے کی دھجیاں اڑادی گئیں،ریڈ زون میں واقع پارلیمنٹ ہاؤس، سپریم کورٹ دیگر عمارتیں ہماری اپنی عمارتیں ہیں، انقلاب مارچ کے شرکا ان ریاستی اداروں کے تقدس کو پامال نہیں کریں گے لیکن وہ لوگ مقدس نہیں جو ان عمارتوں پر قابض ہوگئے ہیں۔ نوازشریف سمیت  دیگر ارکان کو پارلیمنٹ میں جانے دیا تاکہ سارے شکار یکجا ہوجائیں۔

ڈاکٹر طاہر القادری کا کہنا تھا کہ ہم عوام کو زیادہ دیر تک تکلیف میں مبتلا نہیں رکھ سکتے، 65 ہزار کارکن 3 ہفتوں سے صعوبتیں برداشت کررہے ہیں ، وہ ان کو زیادہ دیر تک قابو میں نہیں رکھ سکتے ، کارکنوں کے سامنے بے بس ہونے سے پہلے نواز شریف، شہباز شریف اور اسمبلیاں مستعفی ہوجائیں کیونکہ ان کے پاس اب اقتدار میں رہنے کا قانونی اور اخلاقی جواز نہیں رہا۔ وہ جانتے ہیں کہ انہوں نے پارلیمنٹ ہاؤس سمیت کئی عمارتیں پاک فوج کے حوالے کی ہیں، وہ پاک فوج کے حق میں ہیں، اگر ایسے حالات ہوئے کہ پاک فوج اور پاکستان عوامی تحریک کے کارکن آمنے سامنے آجائیں تو کسی صورت کوئی کارکن ان پر ہاتھ نہ اٹھائے۔ وہ امید کرتے ہیں کہ پاک فوج اپنی قوم کے جوانوں، بوڑھوں اور خواتین پر گولی نہیں چلائیں گے۔ جواسمبلی کے اندر ہے وہ اندر رہے اور جو باہر ہے وہ باہر رہے۔ جوپارلیمنٹ سے باہر نکلے گا اسے کارکنوں کی لاشوں  سے گزرنا ہوگا۔

اپنی رائے کا اظہار کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *