نئی تحقیق میں شام 7 بجے کے بعد کھانا کھانے کا بہت بڑا نقصان سامنے آگیا

Image result for dinner

استنبول -اگر آپ بھی رات دیر کو کھانا کھاتے ہیں تو ہوشیار ہوجائیں کیونکہ سائنسدانوں کا کہنا ہے کہ ایسا کرنے سے آپ دل کے امراض اور دیگر بیماریوں کا شکار ہوسکتے ہیں۔ ان کا کہنا ہے کہ رات دیر کو کھانے سے ہمارا جسم ہائی الرٹ پر رہتا ہے جس کی وجہ سے بلڈ پریشر کے مسائل پیدا ہونے کے ساتھ دل کی بیماریاں اور فالج ہونے کے امکانات بڑھ جاتے ہیں۔انہوں نے تمام لوگوں کو خبردار کیا ہے کہ ہر صورت اپنا کھاناشام 7بجے تک کھالیں تاکہ مختلف بیماریوں سے بچا جاسکے۔

ترکی میں 700افراد پر کی گئی تحقیق میں دیکھا گیا کہ جولوگ رات کو سونے سے پہلے کھاتے تھے ان کا بلڈ پریشر ان لوگوں سے زیادہ تھا جو جلد کھانا کھانے کے عادی تھے۔ماہرین کا کہنا ہے کہ ایک صحت مند انسان کابلڈ پریشر 10فیصد گرجاتا ہے لیکن رات کو دیر سے کھاناکھانے والے افراد میں یہ عمل نہیں ہوتا جس کی وجہ ماہرین یہ بتاتے ہیں کہ کھانا کھانے سے ہمار جسم سٹریس ہارمون کا اخراج کرتا ہے جس سے پیچیدگیاں پیدا ہوتی ہیں۔تحقیق کارڈاکٹر ایبرو اوزپیلٹ کا کہنا ہے کہ جن لوگوں کا بلڈ پریشر کم نہیں ہوتا انہیںnon-dippersکانام دیا جاتا ہے اور ایسے افراد میںدل کے دورے سے مرنے کے امکانات دیگر افراد کی نسبت زیادہ ہوتا ہے۔اس کا کہنا ہے کہ ایسے افراد کا بلڈ پریشر کم عمر میں ہی زیادہ رہنے لگتا ہے جس کی وجہ سے دل اور دیگر اعضاءمتاثر ہوتے ہیں۔اس کا کہنا ہے کہ سونے سے کم ازکم دو گھنٹے سے زیادہ قبل کھانا کھالینا چاہیے تاکہ جسم میں اسے ہضم کرنے کا عمل مکمل ہوجائے اور ایک آئیڈیل وقت7بجے کا ہے۔اس کا یہ بھی کہنا ہے کہ کوشش کریں کہ رات کو سونے سے پہلے کھانے کی مقدار کم رکھی جائے اور ناشتہ اور دوپہر کا کھانا زیادہ مقدار میں کھایا جائے۔”ناشتہ ہرگز نہیں چھوڑنا چاہیے کیونکہ اس وقت جسم اپنا کام شروع کرنے لگتا ہے اور معدے میں کچھ نہ ہونے کی صورت میں ہم جسمانی کمزوریوں کا شکار ہوتے ہیں :-“

اپنی رائے کا اظہار کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *