آئی ایس آئی کے چیف کے بارے میں انگریزی اخبار نے چونکا دینے والا دعویٰ کر دیا

13

حکومت نے پاکستان کی انٹیلی جینس ایجنسی آئی ایس آئی کے سربراہ کے متعلق اہم فیصلہ کر لیا ہے جس کے مطابق اگلے چند ہفتوں میں لیفٹننٹ جنرل رضوان اختر کو ڈی آئی جی کےعہدے سے ہٹا دیا جائے گا۔ ایک خفیہ سکیورٹی اہلکار نے دی نیشن کو بتایا کہ آئی ایس آئی کے سربراہ کی تبدیلی کا فیصلہ کر لیا گیا ہے اور نئے سربراہ کی تقرری پر غور و خوض جاری ہے۔ جنرل رضوان اختر ستمبر 2014 میں آئی ایس آئی کے ڈائریکٹر جنرل بنے تھے ۔ حیرانگی کی بات یہ ہے کہ رضوان اختر اپنے عہدے سے قبل از وقت ہی علیحدہ ہونے والے ہیں ۔ توقع کی جا رہی ہے کہ نئے ڈی جی کراچی سے تعلق رکھنے والے لیفٹننٹ جنرل نوید مختار ہوں گے۔ ایک اور سکیورٹی اہلکار کا کہنا تھا کہ جنرل اختر کراچی میں ڈائریکٹر جنرل کے فرائض سر انجام دے چکے ہیں اس لیے انہیں وہاں کے چیلنجز کا علم ہے۔ ڈی جی کی تبدیلی کے وقت کے بارے میں بات کرتے ہوئے بتایا گیا کہ جنرل راحیل شریف کی مدت ملازمت میں توسیع یا ریٹائرمنٹ سے قبل ڈی جی کی تبدیلی ممکن نظر نہیں آتی۔ یاد رہے کہ اس سال کے شروع میں راحیل شریف نے کہا تھا کہ وہ نومبر میں ریٹائر ہو جائیں گے اور توسیع کا مطالبہ نہیں کریں گے۔ عاصم سلیم باجوہ نے ایسی کسی بھی خبر کو رد کرتے ہوئے کہا ہے کہ فی الحال کوئی تبدیلی نہیں کی جا رہی:۔

اپنی رائے کا اظہار کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *