پاناما کیس، وزیراعظم کے بچوں کے جواب داخل

Panama Case Prime Ministers Children Answerd The Court

اسلام آباد -سپریم کورٹ آف پاکستان  میں پاناما لیکس تحیققاتی کمیشن کے حوالے سے کیس کی سماعت جاری ہے،عدالت عظمیٰ کا پانچ رکنی بینچ کیس کی سماعت کررہا ہے،  وزیراعظم نوازشریف کے بچوں مریم نواز، حسن نواز اور حسین نواز کی جانب سے جواب داخل کرادیئے گئے ہیں، جواب شریف فیملی کی جانب سے وکیل سلمان بٹ نے مشترکہ طور پر پڑھ کر سنائے۔ مریم نواز کی جانب سے داخل جواب میں کہا گیا ہے کہ وہ باقاعدگی سے ٹیکس ادا کرتی رہی ہیں، گوشوارے بھی جمع کراتی رہی ہیں۔ شریف فیملی کے وکیل نے عدالت کو بتایا کہ مریم نواز اپنے والد کی زیر کفالت نہیں جس پر عدالت سنے استفسار کیا کہ کیا کبھی وہ نوازشریف کی زیر کفالت رہی ہیں؟ جس پر وکیل نے جواب دیا کہ دوہزار گیارہ سے ان کے زیر کفالت نہیں اور دو ہزار نو سے باقاعدہ سے اپنے ٹیکس ادا کررہی ہیں، وہ صرف ٹرسٹی ہیں اور آف شور کمپنیوں سے کبھی کوئی مالی فائدہ نہیں لیا۔

حسین نواز اورحسین نواز کی جانب سے دائر جوابات میں عمران خان اور دیگر کے الزامات کو بے بنیاد قرار دیا گیا ہے۔ جواب میں کہا گیا کہ  حسن نواز اور حسین نواز کئی برسوں سے ملک سے باہر ہیں اور کاروبار کررہے ہیں، وزیراعظم نوازشریف کا ان کے کاروباری سے کوئی تعلق نہیں، دونوں کے پاس کوئی سرکاری عہدہ بھی نہیں ہے۔ اس حوالے سے تمام الزامات بے بنیاد اور حقائق کے منافی ہیں۔ شریف فیملی کے وکیل کا کہنا تھا کہ لندن میں جائدا د خریدینے کے لئے رقم بھی پاکستان سے نہیں بھجوائی گئی :-

اپنی رائے کا اظہار کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *