ویلنٹائن ڈے کے لیے ایک نظم

sahil munir

خود خدا محبت ہے
گھر کے سونے آنگن میں
رونقیں محبت سے
دِل کی ویراں بستی میں
راحتیں محبت سے
بزمِ کیف و مستی کی
شدتیں محبت سے
تیرے میرے جذبوں کی
حِدتیں محبت سے
مامتا کے ہونٹوں پر
اِک دعا محبت ہے
باپ کے بڑھاپے کا
آسرا محبت ہے
ظلمتوں کی بستی میں
اِک دِیا محبت ہے
زہر کے پیالے کا
فلسفہ محبت ہے
سولیوں پہ چڑھنے کا
سِلسلہ محبت ہے
سجدہ گاہِ مقتل کی
ہر دعا محبت ہے
رزمِ حق و باطل میں
کربلاؔ محبت ہے
منکرِ محبت سُن!
خود خدا محبت ہے

اپنی رائے کا اظہار کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *