جیتو پاکستان میں بڑے انعامات کیسے ملتے ہیں؟ راز سے پردہ اٹھ گیا!

جیتو پاکستان : بڑے بڑے انعامات جیتنے کا راز پتا چل گیا؟

ماہ رمضان کا مبارک مہینہ اپنی بھرپور رحمتوں کیساتھ جاری و ساری ہے۔ افطاری کے بعد زیادہ تر پاکستانی اپنی ٹی وی اسکرینوں کے سامنے بیٹھ جاتے ہیں۔ اور پھر گیم شوز میں انعامات کی بھرمار دیکھنے کو ملتی ہے ۔ پچھلے ایک ہفتہ سے تقریباً روزانہ اے آر وائے کاپروگرام جیتو پاکستان دیکھنے کا اتفاق ہوا ۔بلاشبہ  اس کیٹگری کے پراگراموں میں سب سے بہتر پایا۔
ان تمام پراگرمز دیکھنے کے بعد ایک بات جس کا افسوس ہوا وہ ہماری عوام کی حرص اور ناشکری ہے۔ اگر کسی کو ایک موٹر سائیکل مفت میں مل گئی تو اسکا شکوہ یہ ہوتا ہے کے گاڑی کیوں نہیں ملی۔ انعامی ڈبے میں آپکا برے سے برا انعام نکل سکتا ہے۔ لیکن پھر بھی اینکر سے عمرے کے ٹکٹ مانگیں جائیں گے۔ ہر ایک کی خواہش ہوتی ہے کہ حرص اور لالچ کو رمضان میں بھی بلندیوں پر لے جائیں۔ کوئی ایک یا دو مہمان ہی ایسے ہونگے جو کہ صبر شکر کرکے بیٹھے رہیں گے۔ 
چند دن پہلے ایک فیملی ماں دو بیٹیوں اور بیٹے کیساتھ جیتو پاکستان میں آئی اور چھا گئی۔ پہلے ایک بیٹی نے موٹر سائیکل جیتی ۔ پھر موٹر سائیکل۔ پھر ایک کار، پھر دوسری کار۔ اور یہ جیتو پاکستان کی تاریخ میں پہلی بار ہوا کہ ایک فیملی نے دو کاریں جیتیں۔ اس فیملی نے اتنے انعامات جیتے اور خاص طور پر دو کاریں کیسے جیتیں ؟

اسکے لیے آپکو خاص اللہ پر توکل کرنا ہو گا۔ چھوٹے سے چھوٹے انعام پر بھی شکر ادا کرنا ہو گا ۔ اس فیملی نے ایک دفعہ بھی حرص یا لالچ ظاہر نہیں کیا ۔انھوں نے گیم کو گیم سمجھ کر کھیلا۔ ایک دفعہ بھی فہد مصطفی سے یہ نہیں کہا کہ ہمیں فلاں انعام چاہیئے یا فلاں انعام۔ ناں ہی ہیرے کی انگوٹھی مانگی ۔ اور ناں ہی عمرے کے ٹکٹ ۔ اللہ تعالیٰ پر سب کچھ چھوڑتے ہوئے مثبت انداز میں گیم کھیلا ۔ اور جب انکی پہلی کار نکلی تو دو بہنوں اور بھائی کا خوشی سے رو رو کر برا حال ہو گیا۔
لہذا اگر آپکو بھی کسی گیم شو میں جانے کا اتفاق ہو تو حرص اور لالچ کے لبادے کو اتار کر جائیں اور توکل اللہ کیساتھ  گیم کھیلیں ۔ یقیناًکامیابی آپکا مقدر ہو گی :-

اپنی رائے کا اظہار کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *