پنجاب میں دہشتگردی کا خطرہ، کئی علاقے حساس قرار !

5

لاہور۔ وزیر اعظم کی نااہلی کے فیصلے کے بعد لاہور سمیت مختلف اضلاع میں مظاہرے، ریلیوں، جلسے اور جلوسوں میں ممکنہ دہشتگردی کے پیش نظر اہم شاہراہوں سمیت حساس مقامات پر دفعہ 144 نافذ کر دی گئی ہے۔ خلاف ورزی پر مقدمات درج کر کے گرفتاریوں کے احکامات جاری کر دیے گئے۔ ذرائع کے مطابق وزیر اعظم کی نااہلی کے فیصلے کے بعد لاہور سمیت پنجاب بھر میں (ن) لیگ کے حامی مشتعل ہیں۔ کارکنوں نے اہم شاہراہوں، چوکوں، گلیوں، بازاروں میں جلوس نکالے اور نعرہ بازی کرتے رہے۔ دوسری جانب دیگر سیاسی پارٹیوں نے وزیر اعظم کی نااہلی کے فیصلے کے بعد خوشی کا اظہار کرتے ہوئے ریلیاں نکالیں۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ لاہور کے 20 علاقوں کو حساس قرار دیا گیا ہے جن میں مال روڈ، جیل روڈ، کینال روڈ، فیروز پور روڈ، والٹن روڈ، کینٹ، شمالی چھاﺅنی و دیگر مقامات موجود ہیں۔

حساس مقامات اور اہم شاہراہوں پر جلسے و جلوس، ریلی وغیرہ نکالنے پر مکمل پابندی عائد کر دی گئی ہے۔ ناخوشگوار واقعہ سے نمٹنے کیلئے پولیس کی 2 ہزار نفری کو بھی چوکنا رہنے کی ہدایات جاری کی گئی ہیں۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ لاہور، فیصل آباد، سیالکوٹ، ٹوبہ ٹیک سنگھ، خانیوال، ساہیوال، ملتان، گوجرانولہ اور دیگر اضلاع میں کوئی بھی خود کش حملہ آور موقع کا فائدہ اٹھاتے ہوئے جلسے و جلوس، ریلی میں گھس کر بڑی دہشت گردی کی کارروائی کر سکتا ہے۔

ذرائع کے مطابق پولیس افسروں کو حکم دیا گیا ہے کہ شاہراہوں، حساس مقامات پر توڑ پھوڑ، لا اینڈ آرڈر کی خلاف ورزی کرنے والے ریکارڈ یافتہ افراد کی نقل و حرکت کو بھی چیک کیا جائے۔ پولیس کا کہنا ہے کہ لا اینڈ آرڈر کی خلاف ورزی کرنے والوں کیخلاف سخت کارروائی کی جائیگی۔ دہشتگردی سمیت دیگر دفعات کے تحت مقدمات درج کئے جائینگے:۔

اپنی رائے کا اظہار کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *