ایم کیو ایم کے کارکن صولت مرزا کے ڈیتھ وارنٹس جاری

Saulat-Mirzaانسداد دہشت گردی کی خصوصی عدالت نے متحدہ قومی موومنٹ کے کارکن صولت مرزا کے ڈیتھ وارنٹس جاری کردیئے ہیں۔
عدالتی احکامات کے مطابق صولت مرزا کو رواں ماہ 19 مارچ کو پھانسی دی جائے گی۔
صولت مرزا کو جولائی 1997 میں کراچی الیکٹرک سپلائی کارپوریشن (کے ای ایس سی)، جو اب کے۔ الیکٹرک کے نام سے جانی جاتی ہے، کے مینیجنگ ڈائریکٹر شاہد حامد، ان کے ڈرائیور اشرف بروہی اور گارڈ خان اکبر کو قتل کرنے کے جرم میں 1999 میں انسداد دہشت گردی عدالت کی جانب سے پھانسی کی سزا سنائی گئی تھی۔
سکیورٹی کی صورتحال کو مد نظر رکھتے ہوئے صولت مرزا کو اپریل 2014 میں بلوچستان کی مچھ جیل منتقل کیا گیا تھا۔گزشتہ برس مئی میں صولت مرزا کے بھائی نے انھیں کراچی جیل منتقل کرنے کے لیے ہائی کورٹ میں ایک درخواست دائر کی، جس میں ان کا موقف تھا کہ صولت مرزا کو متعلقہ حکام کے احکامات اور کسی قسم کے نوٹیفیکیشن کے بغیر مچھ جیل منتقل کیا گیا۔
سندھ ہائی کورٹ، سپریم کورٹ اورصدر مملکت ممنون حسین کی جانب سے صولت مرزا کی رحم کی اپیل کو مسترد کیا جاچکا ہے۔یاد رہے کہ دو ماہ قبل وفاقی حکومت نے صولت مرزا کی سزائے موت پرعملدرآمد روکنے کا حکم جاری کیا تھا۔

اپنی رائے کا اظہار کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *