پاکستان ہاکی کو معاشی بحران سے نکالنے کے لئے حل تلاش کر لیا گیا

پاکستان ہاکی کو معاشی بحران سے نکالنے کے لئے حل تلاش کر لیا گیا، جس میں فیڈریشن میں کرپشن، اقرباءپروری کے خاتمے اور ٹیم کی انٹرنیشنل مقابلوں میں عوامی توقعات کے مطابق کارکردگی دکھانے کے لئے تجاویز بھی پلان کا حصہ ہیں۔

ذرائع کے مطابق ماضی کے عظیم ہاکی پلیئر شہناز شیخ نے وزیر اعظم عمران خان کو خط لکھا ہے جس میں قومی کھیل کو ماضی کے سنہری دور کی طرف لے جانے کی متعدد تجاویز دی گئی ہیں۔

قومی ٹیم کے سابق چیف کوچ و اولیمپئن کی طرف سے لکھے گئے خط کے مطابق گزشتہ تین عشروں سے پی ایچ ایف کے فنڈز کا زیادہ تر دارومدار حکومت کی طرف سے ملنے والے فنڈز پر ہوتا ہے، ماضی کے اس عمل کے خاتمے کے لئے پی ایچ ایف کے لئے فوری طور پر 4 ارب روپے اکٹھے کرنے کی ضرورت ہے، 2 ارب روپے کا انتظام حکومت کرے جب کہ 2 ارب روپے پی ایچ ایف اپنے وسائل سے اکٹھے کرے گا، 4 ارب کی اس رقم کو بینک میں رکھنے کی صورت میں پاکستان ہاکی فیڈریشن کو 30 سے 35 کروڑ روپے کی سالانہ رقم میسر آئے گی، اس رقم سے ہاکی کے تمام ملکی اور انٹرنیشنل معاملات چلانے کو مدد ملے گی۔

شہناز شیخ نے تجویز دی ہے کہ پی ایچ ایف میں کرپشن، اقرباءپروری کے خاتمے کے لئے آئین میں تبدیلی کی جائے اور قومی ٹیم کے پلیئنگ اسٹریکچر میں نئی اصلاحات متعارف کروائی جائیں۔

ذرائع کے مطابق پرائم منسٹر ہاﺅس نے اس خط کا مثبت جواب دیتے ہوئے شہناز شیخ کی عمران خان سے ملاقات کی یقین دہانی کروائی ہے۔

اپنی رائے کا اظہار کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *