دلیپ کمار 2 ہفتوں بعد ہسپتال سے ڈسچارج

شہنشاہ جذبات کہلائے جانے والے بولی وڈ کے لیجنڈ اداکار دلیپ کمار کو 2 ہفتوں بعد ہسپتال سے ڈسچارج کردیا گیا۔

دلیپ کمار کو رواں ماہ 5 ستمبر کو ممبئی کے لیلاوتی ہسپتال میں داخل کرایا گیا تھا۔

لیجنڈ اداکار کو اچانک سینے میں درد اور نمونیا ہوگیا تھا، جس وجہ سے انہیں 2 ہفتوں تک انتہائی نگہداشت کے وارڈ (آئی سی یو)میں رکھا گیا تھا۔

ابتدائی 3 دن تک دلیپ کمار کی حالت انتہائی خراب تھی، تاہم چوتھے روز ان کی طبیعت میں بہتری آنا شروع ہوگئی تھی۔

دلیپ کمار کو دونوں ہفتے آئی سی یو میں رکھا گیا تھا۔

ٹائمز آف انڈیا نے بتایا کہ لیجنڈ اداکار کو مسلسل 2 ہفتوں تک انتہائی نگہداشت کے وارڈ میں رکھے جانے اور مصنوعی طریقے سے سانس دیے جانے کے بعد طبیعت میں بہتری آنے پر ڈسچارج کردیا گیا۔

یہ پہلا موقع ہے کہ دلیپ کمار کو 2 ہفتوں تک ہسپتال میں داخل کیا گیا، جن میں سے زیادہ تر دن وہ آئی سی یو میں داخل رہے۔

دلیپ کمار گزشتہ ایک دہائی سے بیمار اور کمزور ہیں، انہیں متعدد بار سینے میں درد، سانس لینے میں دشواری، بخار اور دیگر بیماریوں کے باعث ہسپتال داخل کرایا جاتا رہا ہے۔

مزید پڑھیں: آئی سی یو میں داخل دلیپ کمار کی صحت میں بہتری

علاوہ ازیں بڑھتی عمر کے ساتھ انہیں صحت کے دیگر مسائل بھی ہونے لگے ہیں۔

پشاور میں 11 دسمبر 1922 کو پیدا ہونے والے دلیپ کمار کا اصل نام یوسف خان ہے اور انہوں نے 1944 میں 22 سال کی عمر میں فلمی دنیا میں قدم رکھا۔

ان کی آخری فلم ‘قلعہ’ 1998 میں ریلیز ہوئی تھی۔

دلیپ کمار کو 1991 میں پدمابھوشن، 1994 میں دادا صاحب پھالکے اور 2015 میں پدماوی بھوشن ایوارڈ سے نوازا گیا۔

اپنی رائے کا اظہار کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *