عمران خان کے تعلیمی ادارے نمل کے خیراتی فنڈز میں خرد برد کا انکشاف

برطانوی اخبار میٹرو کے مطابق عمران خان کے تعلیمی ادارے نمل کے خیراتی فنڈز میں خرد برد کا انکشاف ہوا ہے۔ خیراتی فنڈز میں چار ملین پاؤنڈ کی منی لانڈرنگ کی گئی۔ اخبار کے دعوٰی کے مطابق برطانوی چیریٹی کمیشن نمل کالج کے خیراتی فنڈز سے دبئی میں آف شور کمپنی بنانے اور منی لانڈرنگ کرنے کی تحقیقات کررہا ہے۔

برطانوی اخبار میں شائع ہونے والی خبر کے مطابق برطانیہ کے چیریٹی کمیشن نے عمران خان کے تین خیراتی فنڈز کے خلاف تحقیقات شروع کردی ہیں۔ اخبار کے مطابق تعلیم کے لئے اکٹھے کئے گئے فنڈز دبئی میں آف شور سرمایہ کے لئے بھیجے گئے، جبکہ چیریٹی کمیشن نے نمل کالج کے فنڈز کی تفصیلات اپنی ویب سائٹ پر جاری کردی ہیں۔

اخبار کے مطابق فنڈز کی رقوم عمران خان کی بہنوں کے لئے بھی بھیجی گئیں اور خیراتی فنڈز منی لانڈرنگ کئے جانے کے خدشہ کا بھی ظاہر کیا گیا ہے، جبکہ برطانوی ادارہ نمل کالج کے لئے برطانوی شہریوں سے ملین پاؤنڈز کے فنڈز اکٹھے کئے جانے کی تحقیقات بھی کر رہا ہے۔

نمل کالج نے دوہزار بارہ کے اکاؤنٹس کی تفصیلات جمع نہیں کرائیں۔ جس کے لئے برطانیہ کے چیرٹی کمیشن نے نمل ٹرسٹ کے عمران خان، طاہرنواز، ثوبیہ ضیا اور نعیم خرم سے بارہا درخواست کی گئی، جبکہ کالج ٹرسٹیز کے برطانوی کمیشن کو دیئے گئے بیان کے مطابق رقوم عمران خان کی بہن علیمہ خان کے دبئی کے اکاؤنٹ میں ہیں۔

اپنی رائے کا اظہار کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *