کیلی جینر کا ریکارڈ ایک ’انڈے‘ نے توڑ دیا

انسٹاگرام استعمال کرنے والے صارفین کی دن بہ دن تعداد میں اضافہ ہورہا ہے، کیوں کہ اس ایپلیکشن پر لوگ دلچسپ تصاویر و ویڈیوز شیئر کرکے ایک دوسرے کا محظوظ کرتے ہیں۔

فیس بک کی فوٹو شیئرنگ ایپ پر بھی صارفین بڑے بڑے ریکارڈز قائم کرلیتے ہیں۔

جیسے امریکی رئیلٹی ٹی وی اسٹار اور معروف ماڈل کیلی جینر کی ایک تصویر نے سب سے زیادہ لائیکس حاصل کرنے کا ریکارڈ قائم کیا تھا۔

گزشتہ سال فروری میں کیلی جینر نے اپنے انسٹاگرام اکاؤنٹ پر ایک تصویر شیئر کی تھی، جسے سب سے زیادہ لائیک کی جانے والی تصویر کا اعزاز ملا تھا۔

اس تصویر کو صرف ایک دن کے اندر ڈیڑھ کروڑ سے زائد بار لائیک کیا گیا تھا۔

View this post on Instagram

stormi webster 👼🏽

A post shared by Kylie (@kyliejenner) on 

گزشتہ سال یکم فروری کو پیدا ہونے والی بچی کا نام کیلی نے سٹرومی ویبسٹر رکھا تھا اور اس تصویر میں وہ اپنی ماں کے انگوٹھے کو تھامے ہوئے نظر آرہی تھیں۔

کیلی جینر کی تصویر 18 ملین بار لائیک کی جاچکی ہے، جس نے اپنے نام ورلڈ ریکارڈ کر رکھا ہے۔

لیکن دلچسپ بات یہ ہے کہ ماڈل کا یہ ریکارڈ اب کسی اور تصویر نے توڑ دیا ہے۔

اور آپ کو حیرانی ہوگی کہ یہ ریکارڈ کسی دوسری ماڈل نے نہیں بلکہ ایک انڈے کی تصویر نے توڑا۔

دراصل انسٹاگرام پر ’ورلڈ ریکارڈ ایگ‘ نامی ایک اکاؤنٹ بنایا گیا، جس میں اس اکاؤنٹ کے مالک نے ایک انڈے کی تصویر پوسٹ کی۔

اکاؤنٹ ہولڈر نے انڈے کی اس تصویر کے ساتھ صارفین سے درخواست کی کہ وہ اسے اتنا لائیک کریں کہ یہ انڈا کیلی جینر کی تصویر کا ریکارڈ توڑ سکے۔

اور ایسا ہی ہوا، اس تصویر نے باآسانی 18 ملین سے زیادہ لائیکس حاصل کرلیے، جس کے ساتھ اب یہ ایک انڈا انسٹاگرام پر سب سے زیادہ لائیک کی جانے والے تصویر بن چکا ہے۔

کیلی جینر نے بھی اپنے انسٹاگرام پر ایک ویڈیو شیئر کی، جس میں انہیں ایک انڈے کو گرم زمین پر توڑتے دکھایا گیا۔

View this post on Instagram

Take that little egg

A post shared by Kylie (@kyliejenner) on 

اس پر ماڈل نے لکھا کہ ’اس چھوٹے انڈے کی خیر نہیں‘۔

یاد رہے کہ کیلی کی تصویر سے قبل انسٹاگرام کی سب سے زیادہ پسند کی جانے والی تصاویر میں سے ایک فٹبالر کرسٹیانو رونالڈو کے بچے کی پیدائش جبکہ دوسری گلوکارہ بیونسے کی تھی جس میں انہوں نے حاملہ ہونے کا اعلان کیا تھا اور اسے ایک کروڑ دس لاکھ سے زائد افراد نے لائیک کیا تھا۔

اپنی رائے کا اظہار کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *