خدمات کے شعبے سے متعلق تجارتی خسارے میں 29 فیصد کمی

اسلام آباد: پاکستان کے ادارہ شماریات (پی بی ایس) کے مطابق مالی سال کے پہلے ششماہی حصے میں سروسز تجارتی خسارہ گزشتہ سال کے اسی حصے کے مقابلے میں 29.11 فیصد تک کم ہوگیا۔

پی بی ایس کی رپورٹ میں بتایا گیا کہ پہلے ششماہی سال میں خسارہ 1 ارب 94 کروڑ ڈالر ریکارڈ کیا گیا جبکہ گزشتہ سال اس ہی دوران میں یہ 2 ارب 74 کروڑ ڈالر ریکارڈ کیا گیا تھا۔

اس ہی عرصے میں سروسز کی درآمدات میں 15.97 فیصد کمی آئی جو گزشتہ سال کے 5 ارب 4 کروڑ ڈالر کے مقابلے میں 4 ارب 54 کروڑ ڈالر رہا۔

دوسری جانب سروسز کی بر آمدات میں 2.42 فیصد اضافہ دیکھا گیا جو گزشتہ سال کے 2 ارب 66 کروڑ ڈالر کے مقابلے میں 2 ارب 59 کروڑ ڈالر رہا۔

دریں اثنا، سالانہ حساب سے سروسز کی درآمدات میں 16.2 فیصد کمی ہوئی جو 1 ارب 5 کروڑ ڈالر سے کم ہوکر 88 کروڑ ہوگئی۔

اس ہی عرصے میں سروسز برآمدات میں بھی 11.84 فیصد کمی ریکارڈ کی گئی جو گزشتہ سال کے 46 کروڑ کے مقابلے میں 52 کروڑ ڈالر رہی۔

شماریات کے مطابق دسمبر کے مہینے میں خسارہ گزشتہ سال کے 52 کروڑ ڈالر کے مقابلے میں 41 کروڑ ڈالر رہا۔

یہاں یہ بات بھی واضح رہے کہ ملک کے مالی تجارتی خسارے میں بھی 9.66 فیصد کمی آئی جو گزشتہ سال جولائی سے جنوری 2017-18 کے 21 ارب 32 کروڑ ڈالر کے مقابلے میں 19 ارب 26 کروڑ ڈالر رہی۔

مالی سال کے پہلے 7 ماہ میں برآمدات میں بھی 2.24 فیصد کا اضافہ دیکھنے میں آیا جو گزشتہ سال کے 12 ارب 94 کروڑ ڈالر کے مقابلے میں 13 ارب 23 کروڑ ڈالر پر آگئی جبکہ در آمدات میں 5.17 فیصد کمی آئی جو 34 ارب 26 کروڑ ڈالر کے مقابلے میں 32 ارب 49 کروڑ ڈالر رہی۔

 

اپنی رائے کا اظہار کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *