پاکستان میں ادویات کو غیر موثر کرنے والے مہلک بیکٹیریا میں اضافہ

ٹیکنیکل یونیورسٹی آف ڈنمارک کے نیشنل فوڈ انسٹیٹیوٹ کی جانب سے شائع کی گئی تحقیق میں پاکستان،افغانستان اور بنگلہ دیش سمیت دنیا کے مختلف ممالک میں ادویات کے اثرات کم کرنے والے مہلک بیکٹیریا کی سطح میں اضافہ دیکھنے میں آیا ہے۔

دنیا کے 60 ممالک کے 74 شہروں سے جمع کیے گئے فضلے کے پانی (سیویج) کے تفصیلی جائزے کے بعد اینٹی مائیکروبیل ریزسٹنٹ (اے ایم آر) بیکٹیریا کا عالمی ڈیٹا جاری کیا گیا ہے جو ان ممالک کےصحت مند افراد میں موجود ہیں۔

خیال رہے کہ اینٹی مائیکروبیل ریزسٹنٹ (اے ایم آر) بیکٹیریا وہ بیکٹیریا ہوتے ہیں جو ادویات کے خلاف مزاحمت پیدا کرکے انہیں غیر مؤثر کردیتے ہیں۔

اس حوالے سے محققین کا کہنا ہے کہ ان ممالک کو دو گروہوں میں شامل کیا گیا ہے، شمالی امریکا، مغربی یورپ، آسٹریلیا اور نیوزی لینڈ میں عموماً اینٹی مائیکروبیل ریزسٹنس کی سطح انتہائی کم ہے جسے اچھا سمجھا جارہا ہے جبکہ ایشیا، افریقہ اور جنوبی امریکا میں یہ سطح بہت زیادہ ہے۔

اپنی رائے کا اظہار کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *