خیبر پختونخوا: فتح کے جشن خونی داستانوں میں تبدیل، امیدواروں کے گھروں، جلوسوں پر فائرنگ، 16 جاں‌ بحق

firingخیبر پختونخوا میں 10 سال بعد ہونے والے بلدیاتی انتخابات میں امیدواروں کی کامیابی کا جشن کئی گھرانوں کے لئے پیغام اجل لایا ۔ انتخابی فتح خونی داستانوں اور کبھی نہ بھرنے والے زخموں میں بدل گئی ہے ۔ ٹانک کے علاقے کڑی حیدر میں آزاد کونسلر کی فتح کے بعد نکالی گئی ریلی پر مخالفین نے فائرنگ اور دستی بم سے حملہ کر دیا ۔ حملے میں 8 افراد موقع پر ہی جاں بحق ہوگئے ، پولیس کے مطابق زخمیوں کو ڈسٹرکٹ ہسپتال ٹانک منتقل کیا گیا ۔ ہسپتال ذرائع کے مطابق زخمیوں میں سے 2 افراد ہسپتال میں دم توڑ گئے۔ ہلاکتوں کی تعدا 10 ہوگئی ۔ المناک واقعے کے بعد علاقے میں خوف و ہراس پھیلا ہوا ہے ۔ دوسری طرف کوہاٹ کے نواحی علاقے گمبت باراتی بانڈہ میں فتح کا جشن اس وقت خون کی ہولی میں بدل گیا جب علاقہ مکین کونسلر ذبیع اللہ کی کامیابی پر مبارکباد دینے کیلئے جمع تھے کہ مسلح افراد نے فائرنگ کر دی ۔ فائرنگ سے طاہر اللہ، حضرت بلال اور ثنا اللہ موقع پر جاں بحق اور چار افراد زخمی ہوگئے ۔ پولیس نے ملزموں کے زیر استعمال موٹر سائیکل برآمد کر کے مقدمہ درج کر لیا ہے ۔ مبینہ ملزموں غنی ، ارشد اور نیک بادشاہ نے خواتین کے دیرینہ تنازع پر فائرنگ کی ادھر ڈسٹرکٹ نوشہرہ کی تحصیل جہانگیرہ میں آزاد کونسلر شوکت پر نامعلوم افراد نے فائرنگ کر دی جس کی زد میں آکر دو بچوں سمیت تین افراد جان کی بازی ہار گئے جبکہ واقعہ میں پانچ افراد زخمی بھی ہوئے ، ڈیرہ شہباز میں امیدوار کی جیت پر ہوائی فائرنگ سے ایک راہگیر زخمی ہوگیا۔

اپنی رائے کا اظہار کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *