وفاقی اور صوبائی حکومتوں کی کارکردگی، ن لیگ کوخاص پذیرائی حاصل

Nawaz Shareefجمہوریت کےعالمی دن کی مناسبت سے ایک غیر سرکاری تنظیم نے وفاقی اور صوبائی حکومتوں کے ابتدائی 100دنوں کی کارکردگی کی بنیاد پر رائے عامہ کے جائزے پرمشتمل اپنی رپورٹ جاری کی ہے۔ یہ رپورٹ پلڈاٹ(پاکستان انسٹٹیوٹ آف لیجسلیٹیو ڈیویلپمنٹ اینڈ ٹرانسپرنسی )کے جانب سے کرائے گئے ایک سروے کی بنیاد پر ترتیب دی گئی ہے جس میں چاروں صوبوں سے عوام کی رائے معلوم کی گئی۔ رپورٹ کے مطابق وفاقی حکومت کی کار کردگی پر ملک کے چاروں صوبوں سے 62فیصد خواتین و حضرات نے اطمینان کا اظہار کرتے ہوئے اسے گڈ ریٹنگ دی ۔ سب سے زیادہ پذیرائی مسلح افواج اور صوبائی حکومتوں سے وفاقی حکومت کی ہم آہنگی کی پالیسی کو ملی جبکہ خارجہ پالیسی کے محاذ پر امریکہ ، چین اور بھارت کے ساتھ نواز شریف حکومت کے معاملات کی 57فیصد عوام نے تعریف کی۔ تاہم توانائی اور دہشت گردی سے متعلق حکومتی پالیسی کو کوئی خاص پذیرائی نہیں ملی ۔
صوبائی حکومتوں میں پنجاب کی حکومت کو سب سے زیادہ۷۳ پوائنٹ ملے جبکہ خیبر پختونخواہ کی حکومت ۲۶ پوائنٹ کے ساتھ دوسرے نمبر پررہی۔ تعلیم کے شعبے میں بھی پنجاب حکومت ۶۴ پوائنٹ کے ساتھ پہلے بمبر پر رہی اس کے مقابلے میں خیبر پختونخواہ کی حکومت ۶۲ پوائنٹ حاصل کی۔ سندھ اور بلوچستان کی حکومت کو با لترتیب۸ اور ۱۲ پوائنٹ ملے۔
اسی طرح تعلیم کے شعبے میں بھی پنجاب حکومت کی برتری قائم رہی اورخیبر پختونخواہ تین پوائنٹ کی کمی سے دوسری پوزیشن حاصل کی۔ سروے میں چاروں صوبوں کے وزرا اعلیٰ کی کارکردگی کا بھی جائرہ لیا گیا۔ رپورٹ کے مطابق پنجاب کے وزیر اعلیٰ شہبازشریف کو سب سے زیادہ ۵۹ فیصد لوگوں کی حمایت حاصل رہی جبکہ سندھ کے قائم علی شاہ ۱۸ فیصد رائے دہندگان کی حمایت کے ساتھ دوسرے نمبر رہے۔ پرویز خٹک اور عبدلمالک بلوچ بالترتیب تیسرے اور چھوتے نمبر پر رہے۔

اپنی رائے کا اظہار کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *