پاکستان کوجی ایس پی پلس کا درجہ دینے کا فیصلہ

Euیورپی پارلیمنٹ نے پاکستان کو جی ایس پی پلس کا درجہ دینے کا فیصلہ کرلیا ہے جس کے تحت پاکستانی برآمدات کو عمومی قواعد سے استثنٰی مل جائے گا۔

لاہور میں آل پاکستان ٹیکسٹائل ملز ایسوسی ایشن کے دفتر میں ٹیلی فونک خطاب کرتے ہوئے گورنر پنجاب چوہدری سرور نے بتایا کہ پاکستان کی حق میں چار سو چھ ووٹ آئے جب کہ ایک سو چھیاسی رائے دہندگان نے پاکستان کو جی ایس پی پلیس کا درجہ دینے کی مخالفت کی۔

وزیر اعظم میاں نواز شریف نے یورپی یونین کے اس فیصلے کو پاکستانی مصنوعات پر اعتماد کے اظہار کے مترادف قرار دیا ہے اور کہا ہے کہ یہ کامیابی حکومت کی مسلسل کوششوں کا نتیجہ ہے۔

اس پیشرفت کا سب سے زیادہ فائدہ ٹیکسٹائل اور کپڑے کی صنعت کو ہوگا۔

یہ درجہ بنگلہ دیش اور سری لنکا کے پاس پہلے ہی موجود ہے اور پاکستان اب ان ممالک سے مقابلہ کرنے کی پوزیشن میں ہے۔

دوسری جانب اپٹما کے رہنماؤں نے یورپی پارلیمان کے فیصلوں پر خوشی کا اظہار کیا ہے۔

اپٹما پنجاب کے صدر ایس ایم تنویر نے کہا ہے پاکستان کی پچیس ارب ڈالر کی برآمدات میں ٹیکسٹائل سیکٹر کا حصہ تیرہ ارب ڈالر ہے۔

اعجاز گوہر نے کہا ہے کہ جی ایس پی پلس سے برآمدات بڑھیں گی۔

اپنی رائے کا اظہار کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *