پاکستان گلف نیوز کے دعوؤں کودوطرفہ تعلقات کو نقصان پہنچانے کی شعوری کوشش قرار دیتا ہے

expo 2020دبئی سے شائع ہونے والے روزنامہ گلف نیوز کے ایک ادارئیے کو پاکستان کی وزارتِ خارجہ نے شدید تنقیدکا نشانہ بنایا ہے۔ ادارئیے میں دعویٰ کیا گیا تھاکہ ایکسپو 2020 ء کی میزبانی سے متعلق ہونے والی حالیہ ووٹِنگ میں پاکستان اور افغانستان نے متحدہ عرب امارات کے خلاف ووٹ دیا تھا ۔
مضمون میں یہ دعویٰ کیا گیا ہے کہ پاکستان اور افغانستان نے دبئی کو ووٹ دینے کے سرکاری وعدوں کو توڑ دیا تھا، اور یہ اقدام امارات کے اتحادی یا دوست ملک کے طور پر پاکستان اور افغانستان کی ساکھ کے متعلق سنجیدہ سوالات اٹھاتا ہے۔
دبئی نے 27نومبر کوآخری راؤنڈمیں کل 163میں سے 116ووٹ لے کر ایکسپو کی میزبانی حاصل کی۔مضمون میں کہا گیا ہے کہ ’’ہم گلف نیوز میں یہ پڑھ کر حیران رہ گئے کہ متحدہ عرب امارات کے دو قریبی دوستوں نے دبئی کو ووٹ نہیں دیا۔ پاکستان اور افغانستان نے دوسرے شہروں کو ووٹ دیاحالانکہ ان کے سرکاری ترجمانوں نے یقین دلایاتھا کہ وہ دبئی کو ووٹ دیں گے۔ہم محسوس کرتے ہیں کہ ان دو دوستوں نے ہمیں دھوکہ دیا ہے۔‘‘
اپنے بیان میں پاکستان کے دفتر خارجہ نے ان الزامات کو ’’بے بنیاد اور دوطرفہ تعلقات کو نقصان پہنچانے کی شعوری کوشش‘‘ قرار دیا اور زور دے کر کہا کہ پاکستان نے آخری مراحل میں دبئی ہی کو ووٹ دیا ہے۔
وزارت نے اپنے بیان میں یہ بھی کہا کہ ’’ذمہ دار اخبارات کو اپنی رپورٹوں میں زیادہ سے زیادہ سچائی کو یقینی بنانا چاہئے۔‘‘
وزارتی بیان میں مزید کہا گیاکہ ’’ایکسپو 2020ء کے سلسلے میں پاکستان ترکی کو ووٹ دینے کا اصولی فیصلہ کر چکا تھاجس نے اب سے بہت پہلے، مئی 2011ء میں پاکستان سے اس سلسلے میں حمایت کی درخواست کی تھی۔ متحدہ عرب امارات اس دوڑ میں بہت بعد شامل ہوا۔ اس حقیقت سے عرب امارات کی قیادت کو وضاحت پیش کر دی گئی تھی۔‘‘
بیان میں مزید کہا گیا، ’’امارات کی حکومت کو یہ بھی بتا دیا گیا تھا کہ اگر ترکی اپنی امیدواری سے دستبردار ہو گیا تو پاکستان نہ صرف متحدہ عرب امارات کی حمایت کرے گا بلکہ اس کے لئے دیگر ممالک کو قائل بھی کرے گا۔ بعد ازاں جب ترکی اپنی امید واری سے دستبردار ہو گیا تو پاکستان نے ہر راؤنڈ میں امارات کو ووٹ دیا، امارات کی حکومت نے بھی پاکستان کی معاونت اور مثبت کردار کا اعتراف کیا اور بڑے پیمانے پر پاکستان کو سراہا گیا۔‘‘
گلف نیوز کی اس خبر کے نتیجے میں متحدہ عرب امارات میں مقیم پاکستانی آبادی کی جانب سے ایک شدید ردعمل سامنے آیا۔ تقریباً 1000 لوگوں نے اخبار کو فیڈبیک دیا۔ ان میں سے زیادہ تر اخبار کے روئیے کے خلاف تھے۔گلف نیوز کے ایڈیٹرکے نام اپنے کھلے خط میں، دبئی کی پاکستان ایسوسی ایشن کے جنرل سیکرٹری ڈاکٹر فیصل اکرام نے واضح کیا کہ پاکستانی آبادی کو اخبار کے ادارئیے میں استعمال کردہ زبان سے بہت زیادہ دکھ پہنچا ہے ۔ انہوں نے دعویٰ کیا کہ اخبار کا ردعمل قارئین کو بھٹکانے والا اور غیر ذمہ دارانہ ہے۔

اپنی رائے کا اظہار کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *