منیشا کوئرالہ نے کینسر کو شکست دے دی

manishaکینسر کو شکست دینے میں کامیاب ہونے پر منیشا کوئرالہ کہتی ہیں کہ اب زندگی مزید قیمتی معلوم ہونے لگی ہے لیکن وہ یہ نہیں چاہتیں کہ کینسر ان کی شناخت بن جائے ۔
44سالہ منیشا فلموں جیسے،’’ بمبئی1942‘‘، ’’ایک پیار کی کہانی‘‘ اور ’’دل سے‘‘ وغیرہ میں اپنے غیر روایتی کرداروں کی وجہ سے پہچانی جاتی ہیں۔دو برس قبل منیشا کو یہ معلوم ہوا تھا کہ انہیں اووری کا کینسر لاحق تھا۔ تاہم اب وہ صحت یاب ہو چکی ہیں۔
یہ بتاتے ہوئے کہ بیماری کے بعد زندگی مزید خوبصورت ہو گئی ہے، کوئرالہ نے صحافیوں کو بتایا: ’’میں نے اپنی بیماری کے دوران موت کو بہت قریب سے دیکھا ہے۔ اس دور نے مجھے بدل کر رکھ دیا ہے۔ آج ہر طلوع ہوتا ہوا دن اورپیار سے ملنے والا ہر انسان میرے لئے اہم ہے۔ لیکن میں یہ نہیں چاہتی کہ بیماری میری شناخت بن جائے۔ میں یہ بھی نہیں چاہتی کہ میری بیماری معاشرے کا موضوع گفتگو بن جائے۔‘‘
اب فنکارہ کینسر کے مریضوں کی بحالی اور معاونت کے لئے آگاہی مہم چلا رہی ہیں۔
’’جب آپ کینسر میں مبتلا ہوتے ہیں تو آپ ایک شدید قسم کے نفسیاتی دباؤ کا شکار ہوتے ہیں۔بیماری کے پھر سے لاحق ہو جانے کا خوف ہمیشہ موجود رہتا ہے۔ اگر میری شہرت ، کینسر سے متعلق آگاہی پھیلانے میں مددگار ہو سکتی ہے تومیں لازماً اس کام میں اپنا حصہ ملاؤں گی۔‘‘
فنکارہ نے یہ بھی بتایا کہ وہ ان دنوں اپنی زندگی پر ایک کتاب لکھنے کے ساتھ ساتھ مصوری میں بھی گہری دلچسپی لے رہی ہیں۔

اپنی رائے کا اظہار کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *