وہ خواتین جو اپنی اداﺅں سے مردوں کو متاثر کرنے کی کوشش کرتی ہیں، ذرا یہ پڑھ لیں!

c76

دلکش نظر آنے کے لئے مصنوعی انداز اور اداﺅں کا سہارا لینا کچھ خواتین کی عادت بن جاتی ہے، اور انہیں یہ خوش فہمی بھی ہو جاتی ہے کہ ان کے انداز و اطوار مردوں کے ہوش اڑارہے ہیں۔ حال ہی میں سوشل میڈیا ویب سائٹ ریڈٹ پر جب مردوں سے خواتین کی ان عادات کے بارے میں پوچھا گیا کہ جو خواتین کی اپنی نظر میں تو انتہائی دلکش ہیں لیکن مردوں کو زہر لگتی ہیں، تومصنوعی اداﺅں کے ستائے ہوئے مردوں نے خوب دل کی بھڑاس نکالی اور شکوے شکایتوں کے انبار لگادئیے۔ کیا کیا کہا گیا، آپ بھی پڑھئے، شاید ان میں سے کچھ آپ کے جذبات کی بھی ترجمانی کرتے ہوں۔

بہت کوفت ہوتی ہے جب خواتین خود کو شہزادی سمجھنا، اور حتٰی کہ کہنا بھی شروع کر دیتی ہیں۔
جب بھاری میک اپ سے خود کو حسینہ عالم بنانے کی کوشش میں چہرے پر میک اپ کی تہیں جما کر مضحکہ خیز شکل بنا لیتی ہیں۔
جب وہ خودکو بے کس اور مدد کی طلبگار ظاہر کرتی ہیں، اور سمجھتی ہیں کہ مرد ان کی خدمت کے لئے پیدا ہوئے ہیں۔
جب معصوم نظر آنے کے لئے بچوں کا سالہجہ بنا کر بات کرتی ہیں۔
جب وہ دلکش نظر آنے کے لئے مضحکہ خیز لباس زیب تن کرتی ہیں۔
جب وہ اپنی اہمیت جتانے کے لئے بتاتی ہیں کہ انہیں بہت پسند کیا جاتا ہے اور ان کے کئی طلبگار ہیں۔
جب باریک اور تیز آواز میں گفتگو کرکے سمارٹ نظر آنے کی کوشش کرتی ہیں۔
سیلفی بناتے ہوئے نصف چہرے کو ہاتھ سے ڈھانپ لیتی ہیں، جانے یہ کیا ادا ہے۔
جب وہ چیونگم چباتے ہوئے زور زور سے منہ چلاتی ہیں۔
کچھ تو بطخ جیسا منہ بنا کر سیلفی بناتی ہیں۔
اور وہ جو لمبے ناخن رکھتی ہیں، معلوم نہیں یہ حسن کا کونسا انداز ہے۔
بعض تو ننھی گڑیا بننے کی کوشش کرتی ہیں۔
اور کچھ ایسی بھی ہیں کہ جو اونچی ایڑھی والی جوتی پہنتی ہیں اور پھر اس کے مسائل اور تکلیف کا واویلا کرتی ہیں، بہت نازک نظر آنے کی کوشش کرتی ہیں، بھلا اتنی ہی نازک ہیں تو تکلیف والا کام ہی کیوں کرتی ہیں :۔

اپنی رائے کا اظہار کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *