برطانیہ میں بلی کی جسامت کے چوہوں کی بھر مار،زہر بھی بے اثر

Mouseبرطانیہ میں بڑی جسامت کے چوہوں نے دہشت پھیلارکھی ہے جن پر عام چوہے مار زہر اثر نہیں کرتا۔مختلف علاقوں میں بلی کی جسامت کے کئی چوہے مارے بھی گئے ہیں۔
برطانوی باشندوں کے لیے تشویش ناک بات یہ ہے کہ ان چوہوں کی تعداد تیزی سے بڑھ رہی ہے ۔ مختلف کاؤنٹیوں کے گلی کوچوں میں دندناتے ہوئے چوہوں نے مکینوں کو خوف زدہ کردیا ہے ۔دو ماہ قبل کورن وال کے علاقے میں دو فٹ لمبا چوہا پکڑا گیا تھا جب کہ کینٹ اور لیورپول میں بھی کافی بڑے چوہے دیکھے گئے ہیں۔ خوف و دہشت کی گہری ہوتی فضا نے سائنس دانوں کو بھی مجبور کیا کہ وہ ملک میں چوہوں کی بڑھتی ہوئی تعداد اور ان کے زہر سے محفوظ ہونے کے بارے میں تحقیق کریں ۔سائنس دان اب17کاؤنٹیوں میں بلی کی جسامت کے چوہوں پر نظر رکھے ہوئے ہیں اور ان پر تجربات بھی کررہے ہیں۔ماہرین نے ان چوہوں پر جینیاتی تجربات بھی کئے ہیں جن سے پتہ چلا ہے کہ ان کے جینز میں تبدیلیاں واقع ہوئی ہیں جس کی وجہ سے ان میںروایتی زہر کے خلاف مزاحمت پیدا ہوگئی ہے ۔رواں برس کے آغاز پر کی گئی ایک تحقیق میں بتایا گیا تھا کہ برطانیہ میں چوہوں کی آبادی برق رفتاری سے بڑھ رہی ہے اور ممکنہ طور پر اگلے برس تک ان کی تعداد ا نسا نو ں سے بڑھ جائے گی ۔ گزشتہ دنوں ایک برطانوی ٹی وی چینل پر چوہوں کی یلغار کے بارے میں رپورٹ بھی دکھائی گئی ۔ رپورٹ میں بتایا گیا کہ بلی کی جسامت کے چوہے نہ صرف املاک کو نقصان پہنچا رہے ہیں بلکہ ان کی وجہ سے انسانوں میں مختلف بیماریاں بھی پھیل سکتی ہیں۔ ان بیماریوں میں’’ و یل کا مرض ‘‘ بھی شامل ہے جس کی علامات شروع میں فلو جیسی ہوتی ہیں مگر آگے چل کر یہ مرض یرقان اور گردوں کے ناکام ہونے کا سبب بنتا ہے ۔

اپنی رائے کا اظہار کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *