اسٹاک مارکیٹ میں مندی برقرار، 100 انڈیکس 1700 سے زائد پوائنٹس گر گیا

پاکستان اسٹاک ایکسچینج میں مندی کا سلسلہ جاری ہے اور آج کاروباری ہفتے کے چوتھے روز مسلسل بدترین مندی کے باعث کاروبار کو پھر روک دیا گیا۔

کے ایس ای 100 انڈیکس
کے ایس ای 100 انڈیکس

جمعرات کو کاروبار کا آغاز ہوا تو ایک ہفتے سے زائد عرصے سے جاری مندی کا رجحان ختم نہ ہوسکا اور ابتدا میں ہی کے ایس ای 100 انڈیکس ایک ہزار 752 پوائنٹس گر کر 28 ہزار 664 پوائنٹس کی سطح پر آگیا۔

کے ایس ای 100 انڈیکس کے ساتھ ہی 30 انڈیکس میں بھی 6.92 فیصد یا 916 پوائنٹس کی کمی ریکارڈ کی گئی جس کے باعث کاروبار کو 45 منٹ کے لیے روک دیا گیا۔

یہاں یہ مدنظر رہے کہ یہ رواں ہفتے میں تیسری جبکہ 2 ہفتوں میں چھٹی مرتبہ ہے کہ مندی کے باعث کاروبار کو معطل کرنا پڑا۔

واضح رہے کہ بورس رولز کے مطابق کے ایس ای 30 انڈیکس 4 فیصد یا اس سے زائد گر جائے اور 5 منٹ تک برقرار رہے تو کاروبار کو 45 منٹ کے لیے روک دیا جاتا ہے۔

خیال رہے کہ گزشتہ روز پاکستان اسٹاک ایکسچینج میں کے ایس ای 100 انڈیکس 2 ہزار 200 پوائنٹس کم ہونے کے بعد 30 ہزار 416 پوائنٹس پر بند ہوا تھا۔

گزشتہ روز جب کاروباری دن کا آغاز ہوا تھا تو تقریباً ایک گھنٹے بعد 1682 پوائنٹس کی کمی کے بعد کاروبار کو معطل کرنا پڑا تھا۔

منگل یعنی 17 مارچ کو بھی سرمایہ کاروں میں کورونا وائرس کے حوالے سے بے چینی کے باعث شدید مندی کا رجحان جاری رہا تھا اور ایک ہزار پوائنٹس کی کمی کے ساتھ کے ایس ای-100 انڈیکس 32 ہزار 650 پوائنٹس پر بند ہوا تھا۔

اگر رواں ہفتے کے آغاز کی بات کریں تو پیر کو کاروبار کا اختتام چار ماہ کی کم ترین سطح 2 ہزار 416 پوائنٹس کے ساتھ 33 ہزار 644 پوائنٹس پر ہوا تھا جبکہ اسی روز کے ایس ای 100 انڈیکس ایک ہزار 651 پوائنٹس گرنے پر کاروبار روکا گیا تھا۔

پیر کو دیکھی جانے والی شدید مندی کے باعث مارکیٹ سے 382 ارب روپے کی بھاری رقم صاف ہوگئی تھی۔

error: