بختاور بھٹو کے ہونے والے منگیتر محمود چوہدری کون ہیں؟ پیپلز پارٹی نے وضاحتی بیان جاری کر دیا

پاکستان پیپلز پارٹی نے منگل کو ایک بیان جاری کیا ہے جس میں بختاور بھٹو زرداری اور ان کے ہونے والے منگیتر محمود چوہدری سے متعلق ’سوشل اور الیکٹرانک میڈیا پر شیئر کی جانے والی غلط خبروں کی وضاحت کی گئی ہے۔‘

بیان میں کہا گیا ہے کہ آصف علی زرداری اور بینظیر بھٹو کی بیٹی بختاور بھٹو کی منگنی 27 نومبر 2020 کو ہونے جا رہی ہے۔

اس وضاحتی بیان میں بختاور کے ہونے والے منگیتر محمود چوہدری کے بارے میں کچھ معلومات بھی دی گئی ہیں۔

بیان کے مطابق محمود چوہدری، محمد یونس اور بیگم ثریا چوہدری کے صاحبزادے ہیں جن کا تعلق پرانے لاہور سے ہے لیکن سنہ 1973 میں وہ متحدہ عرب امارت منتقل ہو گئے جہاں انھوں نے تعمیرات اور ٹرانسپورٹ کے کاروبار کی بنیاد رکھی۔

بیان میں یہ بھی بتایا گیا ہے اپنے پانچ بہن بھائیوں میں سب سے چھوٹے محمود، 28 جولائی سنہ 1988 کو متحدہ عرب امارت میں پیدا ہوئے اور وہیں سے ابتدائی تعلیم حاصل کرنے کے بعد مزید تعلیم کے لیے برطانیہ چلے گئے جہاں انھوں نے یونیورسٹی آف درہم سے قانون کی تعلیم حاصل کی۔

بیان میں یہ وضاحت بھی دی گئی ہے کہ یونس چوہدری کا خاندان متحدہ عرب امارات میں مقیم ہے جہاں محمود تعمیرات، فنانس اور ٹیکنالوجی کے کاروبار سے منسلک ہیں۔

یاد رہے پاکستان کی سابق وزیر اعظم بینظیر بھٹو اور سابق صدر آصف علی زرداری کی بڑی صاحبزادی بختاور بھٹو زرداری کی منگنی کی خبر 14 نومبر کو دی گئی تھی۔

آصف علی زرداری کی جانب سے جاری پیغام میں انھوں نے اپنی بیٹی کی منگنی کی تصدیق کرتے ہوئے کہا تھا کہ بختاور بھٹو کی منگنی کی تقریب 27 نومبر کو کراچی میں بلاول ہاؤس میں منعقد کی جائے گی۔

پی پی پی

بختاور بھٹو زرداری کی منگنی کی تقریب منعقد کیے جانے کا دعوت نامہ بھی سوشل میڈیا میں زیر گردش رہا ہے جس میں آصف علی زرداری اور بینظیر بھٹو کی شادی کی تصویر بھی موجود ہیں۔

تاہم منگنی کی خبر سامنے آنے کے بعد سوشل میڈیا صارفین نے رائے زنی شروع کر تھی کہ محمود چوہدری کون ہیں۔

دعوت نامے میں کورنا وائرس کی وبا کے باعث ہدایات کی فہرست بھی شامل ہے جس کے مطابق تقریب میں محدود تعداد میں مہمانوں کو بلایا جائے گا اور سماجی فاصلوں کا بھی خیال رکھا جائے گا۔

ہدایت کے مطابق تقریب میں شرکت کے لیے آنے والے مہمانوں کو پہلے اپنا کورونا ٹیسٹ کروانا پڑے گا اور ای میل کے ذریعے اپنی منفی کورونا ٹیسٹ کی کاپی ای میل کرنی ہوگی اور اس کے بعد ہی ان مہمانوں کو تقریب میں شامل ہونے کی اجازت دی جائے گی۔

اس کے علاوہ ہدایات میں درج ہے کہ تقریب میں موبائل فون لے جانے کی اجازت نہیں ہوگی۔

پی پی پی

آصف زرداری اور بینظیر بھٹو کے تین بچے ہیں جن میں سے بختاور کا دوسرا نمبر ہے۔

بلاول بھٹو زرداری کی پیدائش 1988 میں ہوئی تھی، جب کہ بختاور بھٹو زرداری کی پیدائش جنوری 1990 میں ہوئی تھی۔

آصف علی زرداری اور بینظیر بھٹو کی تیسری اولاد ان کی بیٹی آصفہ بھٹو زرداری ہیں جن کی پیدائش فروری 1993 میں ہوئی تھی۔

سوشل میڈیا پر بھی اس اعلان کے چرچے ہیں اور کئی صارفین نے بختاور بھٹو کو ان کی منگنی طے ہونے پر مبارکباد پیش کی ہے۔

بختاوری

اپنی رائے کا اظہار کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *