سندھ، پنجاب کے بعد خیبر پختونخوا میں بھی لمپی اسکن وبا پھلنے لگی

مویشیوں میں پھیلتی ہوئی لمپی اسکن بیماری سندھ اور پنجاب کے بعد خیبر پختونخوا میں بھی پہنچ گئی ہے اور پشاور، چارسدہ اور ڈیرہ اسمٰعیل خان اضلاع میں کیسز سامنے آئے ہیں۔

ڈان اخبار میں شائع سرکاری خبر رساں ایجنسی ’اے پی پی‘ کی رپورٹ کے مطابق لائیو اسٹاک فارمرز ویلفیئر ایسوسی ایشن کی طرف سے جاری ہونے والے بیان میں کہا گیا کہ ڈائریکٹر جنرل لائیو اسٹاک ڈاکٹر عالم زیب نے صوبے میں لمپی اسکن بیماری سامنے آنے کی تصدیق کی ہے۔

ویلفیئر ایسوسی ایشن کے صدر محمد آصف اعوان نے صوبائی چیف سیکریٹری اور سیکریٹری محکمہ لائیو اسٹاک پر زور دیا ہے کہ اس بیماری کے پھیلاؤ کے خلاف حفاظتی اقدامات کرنے لیے فنڈر جاری کیے جائیں۔‎

انہوں نے کہا کہ لمپی اسکن بیماری پہلے ہی سندھ اور پنجاب میں پہلے ہی مویشیوں کی بہت بڑی تعداد کو متاثر کر چکی ہے اور اگر حفاظتی اقدامات نہیں کیے گئے تو خیبر پختونخوا میں ڈیری فارمنگ کمیونٹی پر اس بیماری کا اثر بہت نقصان دہ ہوگا۔

آصف اعوان نے اس بات پر بھی زور دیا کہ مویشیوں کے مالکان میں بیماری اور اس کے علاج کے بارے میں آگاہی کو بھی یقینی بنایا جائے۔

انہوں نے مطالبہ کیا کہ صوبے کے تمام داخلی راستوں کو بند کرنے کے ساتھ ساتھ صوبے میں ویٹرنری کنٹرول رومز بھی قائم کیے جائیں تاکہ اس بیماری کو مزید پھیلنے سے روکا جاسکے۔