سندھ اسمبلی: پی ٹی آئی اراکین کا ایوان میں 'منحرف ارکان پر حملہ'، شدید ہنگامہ آرائی

سینیٹ انتخابات سے قبل سندھ اسمبلی میں پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کے اراکین نے اپنی پارٹی کے اُمیدواروں کے حق میں ووٹ نہ دینے کا اعلان کرنے والے ساتھیوں پر مبینہ طور پر حملہ کردیا۔

سندھ اسمبلی کے اجلاس سے قبل تحریک انصاف کے منحرف اراکین کریم بخش گبول، شہریار شر اور اسلم ابڑو نے اسمبلی کے رجسٹر میں حاضری لگائی جہاں پاکستان پیپلز پارٹی (پی پی پی) کے حکومتی اراکین نے تینوں اراکین صوبائی اسمبلی کا استقبال کیا۔

تاہم پی ٹی آئی کے دیگر اراکین منحرف ساتھیوں کے ایوان میں آتے ہی ان سے الجھ پڑے اور مبینہ طور پر ان پر حملہ کردیا اور دونوں گروپوں کے درمیان ہاتھا پائی ہوئی۔

بعد ازاں ڈپٹی اسپیکر نے اجلاس کل تک کے لیے ملتوی کردیا۔‎

اجلاس ملتوی ہونے کے بعد رکن صوبائی اسمبلی حلیم عادل شیخ کی سربراہی میں پی ٹی آئی کے دیگر اراکین میڈیا سے گفتگو کے دوران مبینہ طور پر صحافیوں سے بھی الجھ پڑے جس کی وجہ سے نیوز کانفرنس کو ختم کرنا پڑا۔

اپنی مرضی سے ووٹ دیں گے، اسلم ابڑو

علاوہ ازیں پی ٹی آئی کے باغی اراکین نے صوبائی اسمبلی میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ 'ہمیں کسی نے اغوا نہیں کیا، پاکستان کا آئین ہمیں حق دیتا ہے کہ اپنی مرضی سے جسے چاہے ووٹ دیں'۔

اسلم ابڑو کا کہنا تھا کہ 'ہم نے مطالبہ کیا تھا کہ ہمیں کچھ دو، سندھ کی عوام مطالبہ کر رہی ہے انہیں اب تک کچھ نہیں ملا ہے'۔

انہوں نے کہا کہ 'سینیٹ انتخابات میں رائے شماری خفیہ ہونی تھی، ہم چاہتے تو چھپ کر بھی دے سکتے تھے تاہم ہمارے ضمیر نے اس کی اجازت نہیں دی'۔

سینیٹ انتخابات شفاف ہوں گے، شہلا رضا

رہنما پیپلز پارٹی شہلا رضا نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے اسمبلی میں ہنگامہ آرائی کی مذمت کی۔

انہوں نے بتایا کہ پی ٹی آئی کے اجلاس کے دوران ہونے والی ہنگامہ آرائی کے دوران دو اراکین کو میں نے خود روکنے کی کوشش کی تھی تاہم ایک نے مجھے بھی دھکا دے دیا'۔

اغوا کے حوالے سے ایک سوال کے جواب میں ان کا کہنا تھا کہ 'پی ٹی آئی کے تینوں اراکین کو اغوا آج کیا گیا تھا'۔

انہوں نے پیش گوئی کی کہ آئندہ روز ہونے والے انتخابات شفاف ہوں گے۔

اغوا اور پیسوں کے الزامات کا کوئی جواز نہیں، ناصر حسین شاہ

پیپلز پارٹی رہنما ناصر حسین شاہ نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ 'تینوں پی ٹی آئی اراکین اپنی مرضی سے آئے تھے اور انہوں نے پی ٹی آئی کی قیادت سے ناراضی کا اظہار کیا ہے'۔

انہوں نے کہا کہ اغوا کرنے اور پیسوں کی بات کے الزامات کا کوئی جواز نہیں بنتا۔

ان کا کہنا تھا کہ پیپلز پارٹی جمہوریت پر یقین رکھتی ہے، سب کو حق ہے کہ جسے چاہے ووٹ دے۔

انہوں نے مزید کہا کہ تحریک انصاف کے اراکین قومی اسمبلی نے بھی کھل کر اپنی پارٹی سے ناراضی کا اظہار کیا ہے، ہر جگہ ان کے اپنے لوگ ان کی پالیسیز سے تنگ ہیں۔

اپنی رائے کا اظہار کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *