Site icon Dunya Pakistan

شیخوپورہ: سسرالی رشتہ داروں کے سامنے نوبیاہتا دلہن کا گینگ ریپ

شیخوپورہ: فاروق آباد صدر پولیس تھانے کی حدود میں موجود کھیتوں میں 3 روز کی نوبیاہتا دلہن کو 3 افراد نے گینگ ریپ کردیا۔

 رپورٹ کے مطابق دلہن شادی کے ایک روز بعد ایلان والی گاؤں میں اپنے والدین کے گھر سے اپنی ساس اور 3 رشتہ داروں کے ہمراہ رکشے میں واپس آرہی تھی۔

جب رکشہ موٹروے پر انڈر پاس سے گزرا تو ماسک پہنے 3 افراد نے انہیں روکا اور رکشے میں سوار افراد سے موبائل فون اور زیورات چھیننے کے بعد دلہن کو گینگ ریپ کیا۔

ریپ کے بعد ملزمان نے خاتون کو اس کا موبائل فون واپس کردیا جبکہ رقم اور زیورات لے کر فرار ہوگئے۔

پولیس نے واقعے کا مقدمہ درج کرنے کے تحقیقات کا آغاز کردیا، انسپکٹر جنرل پولیس نے ضلعی پولیس افسر کو سخت ایکشن لینے اور ریپسٹس کو گرفتار کرنے کی ہدایت کی۔

بعدازاں فاروق آباد صدر پولیس نے اس مقدمے میں 4 ملزمان کو گرفتار بھی کرلیا۔

گھر میں ڈکیتی کے دوران خاتون کا ریپ

دوسری جانب فیصل آباد کے مرید والا پولیس تھانے کی حدود میں چک 192-جی بی میں ایک گھر میں ڈکیتی کے دوران ڈاکووں کے گروہ نے ایک خاتون کا ریپ کردیا۔

ایک دوسری رپورٹ کے مطابق پولیس کو جمع کروائی گئی شکایت میں شکایت گزار شاہد نامی شخص نے کہا کہ 10 ڈاکوؤں کا گروہ دیوار پھلانگ کر ان کے گھر میں داخل ہوا اور گن پوائنٹ پر انہیں اور ان کے اہلِ خانہ کو یرغمال بنا کر رسیوں سے باندھ دیا۔

انہوں نے کہا کہ مجرمان ان کے گھر سے ہزاروں روپے مالیت کی نقدی، سونا کی اشیا اور دیگر قیمتی سامان لوٹ کر فرار ہوگئے۔

شکایت گزار کا مزید کہنا تھا کہ ڈاکووں نے ان کے گھر کی ایک خاتون کو دیگر افراد کی موجودگی میں گن پوائنٹ پر ریپ بھی کیا۔

پولیس نے ڈکیتی اور ریپ کا مقدمہ درج کرنے ملزمان کی تلاش شروع کردی تاہم اب تک کوئی گرفتاری عمل میں نہ آسکی۔

قبل ازیں رواں ماہ پنجاب کے ضلع لیہ میں ایک خاتون کی جانب سے پولیس میں شکایت کی گئی تھی کہ 9 افراد نے انہیں دو بیٹیوں اور بہو سمیت قید میں رکھا اور ریپ کا نشانہ بنایا۔

Exit mobile version