عید کے لاک ڈاؤن کے بعد ملک بھر میں کاروباری سرگرمیاں بحال

اسلام آباد: ایک ہفتے سے زائد کے لاک ڈاؤن کے بعد پیر سے ملک بھر میں کاروباری سرگرمیاں بحال ہوگئیں۔

دوسری جانب سے چین سے کورونا وائرس سے بچاؤ کی ویکسین کی مزید 12 لاکھ خوراکین بھی پاکستان پہنچ چکی ہیں۔

رپورٹ کے مطابق نیشنل کمانڈ اینڈ آپریشن سینٹر (این سی او سی) نے عوام پر زور دیا ہے کہ موقع سے فائدہ اٹھائیں اور ویکسین لگوائیں۔

این سی او سی کے اعداد و شمار کے مطابق گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران 3 ہزار 232 افراد وائرس سے متاثر پائے گئے جبکہ 74 دم توڑ گئے جبکہ ملک میں فعال کیسز کی تعداد 68 ہزار 223 رہ گئی ہے۔

این سی او سی کے فیصلے کے مطابق کاروباری سرگرمیوں کو 17 مئی سے بحال ہونا تھا لیکن اشیائے ضروریہ فروخت کرنے والی دکانوں کے علاوہ تمام مارکیٹس اور دکانیں رات 8 بجے بند ہوجائیں گی۔

اسی طرح سرکاری اور نجی دفاتر میں بھی معمول کے اوقات کے تحت کام شروع ہوگیا ہے البتہ 50 فیصد افرادی قوت کے گھروں سے کام کرنے کی پابندی نافذ العمل رہے گی۔

اس کے علاو 19 مئی تک تمام انڈور اور آؤٹ ڈور ڈائننگ پر بھی پابندی برقرار رہے گی تاہم کھانا خرید کر کے لے جانے کی اجازت ہوگی۔

اس سے قبل این سی او سی نے اعلان کردہ تاریخ یعنی 17 مئی کے بجائے 16 مئی سے پبلک ٹرانسپورٹ بحال کرنے کا فیصلہ کیا تھا۔

دوسری جانب چین سے سائینوویک ویکسین کی 10 لاکھ جبکہ کین سینو کو ایک لاکھ 95 ہزار خوراکیں پاکستان پہنچیں۔

وزارت صحت کے ایک عہدیدار نے نام نہ ظاہر کرنے کی شرط پر بتایا کہ یہ ویکسین حکومت نے خریدی ہے۔

ان کا مزید کہنا تھا کہ 'ہمیں آئندہ آنے والے ہفتوں میں بھی بڑی تعداد میں ویکسینن کی خوراکیں ملیں گی اور امید ہے کہ 30 جون سے قبل کوویکس کے ذریعے بھی لاکھوں خوراکیں آئیں گی۔

error: