میٹا: فیس بک کے نام میں تبدیلی کے بعد اسرائیل 'فیس بک ڈیڈ' کیوں ٹرینڈ کر رہا ہے؟

فیس بک کی جانب سے اپنا نام تبدیل کر کے میٹا رکھنے کا فیصلہ اسرائیل میں مزاح کی نذر ہو گیا ہے کیونکہ عبرانی زبان میں اس لفظ کا مطلب ہے 'مردہ'۔

اس بات کی باریکی میں جائیں تو دراصل میٹا کا تلفظ ہو بہ ہو عبرانی زبان کے ایک لفظ جیسا ہے۔

ٹوئٹر پر اکثر افراد نے 'فیس بک ڈیڈ' یعنی 'فیس بک مردہ' کے ہیش ٹیگ تلے اس حوالے سے اپنی آرا کا اظہار کیا ہے۔

اسرائیل کی ایمرجنسی ریسکیو کارکنان کی تنظیم زاکا بھی اس بحث میں شریک ہوئی اور ٹوئٹر پر اپنے فولوئرز سے مزاق کرتے ہوئے کہا کہ 'پریشان نہ ہوں، ہم سنبھال لیں گے۔'

ایک اور ٹوئٹر صارف نے لکھا کہ 'عبرانی زبان بولنے والوں کو ہنسنے کی وجہ دینے کے لیے بہت شکریہ۔'

فیس بک وہ اکیلی کمپنی نہیں ہے جسے اپنی برانڈنگ کے ترجمے پر مزاحیہ تبصروں کا سامنا ہے۔ درج ذیل ایسی ہی کچھ دیگر مثالیں ہیں جہاں اکثر اوقات حقیقت ترجمے میں کہیں کھو گئی تھی۔

ٹویٹ

'اپنی انگلیاں کھا جائیں'

جب کے ایف سی 80 کی دہائی میں چین میں متعارف کروایا گیا تھا، تو اس کا موٹو (نعرہ) 'فنگر لکن گڈ' یا 'اتنا لذیذ کے آپ کو انگلیاں چاٹنی پڑ جائیں' مقامی لوگوں کو بالکل بھی نہیں بھایا تھا۔

اس کا ترجمہ مینڈارن زبان میں کچھ یوں تھا، 'اپنی انگلیاں کھا جائیں'۔

تاہم اس کا کمپنی کے کاروبار پر کچھ خاص اثر نہیں پڑا تھا، کے ایف سی ملک میں سب سے بڑی فوڈ چینز میں سے ایک ہے۔

زکربرگ

'فضلہ'

کاریں بنانے والی کمپنی رولز رائس نے اپنی ایک گاڑی کا نام 'سلور مسٹ' رکھا تھا جس کا جرمن زبان میں مطلب 'فضلہ' ہے۔

بعد میں اس گاڑی کا نام 'سلور شیڈو' رکھ دیا گیا تھا۔

اسی طرح موبائل بنانے والی کمپنی نوکیا نے سنہ 2011 میں اپنے ایک فون 'لومیا' کی نقاب کشائی کی تو انھیں وہ ردِ عمل نہیں ملا جس کی انھیں توقع تھی۔

اس کی وجہ یہ تھی کہ ہسپانوی زبان میں لومیا کا مطلب سیکس ورکر ہوتا ہے حالانکہ یہ صرف اس زبان کی ایسی بولیوں میں بولا جاتا ہے جن پر جپسی اثرات ہوتے ہیں۔

ہونڈا کی بھی ایسی ہی ایک دلچسپ کہانی ہے۔ اس نے اپنی نئی گاڑی کا نام ’فٹا‘ رکھنے کا فیصلہ کیا تھا لیکن سویڈش زبان میں اس کا مطلب دراصل اندام نہانی ہے۔

بظاہر اس کا ترجمہ بہت سی دیگر زبانوں میں بھی کچھ اچھے الفاظ میں نہیں ہوتا تھا، اس لیے لانچ سے پہلے ہی اس غلطی کو پکڑا گیا اور اس کار کو اکثر ممالک میں ’جیز‘ کے نام سے متعارف کروانے کا فیصلہ کیا گیا۔

اپنی رائے کا اظہار کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *

error: