Site icon Dunya Pakistan

میڈیا ورکرز کے حقوق کیلئے ملک بھر میں مظاہرے

اسلام آباد: پاکستان فیڈرل یونین آف جرنلسٹس (پی ایف یو جے) کی کال پر ملک بھر میں صحافیوں اور میڈیا ورکرز کے معاشی حقوق کے تحفظ اور پریز کی آزادی کے لیے مظاہرے کیے گئے۔

 رپورٹ کے مطابق پی ایف یو جے کے سلوگن ’بس بہت ہوگیا‘ کے تحت ہونے والے ان مظاہروں میں صحافیوں، ٹریڈ یونینسٹ اور ریڈیو پاکستان اور پاکستان ٹیلی ویژن سمیت میڈیا ہاؤس سے نکالے گئے متاثرین نے شرکت کی۔

اسلام آباد میں نیشنل پریس کلب کے باہر ریلی سے خطاب کرتے ہوئے پی ایف یو جے کے سیکریٹری جنرل ناصر زیدی نے حکومت کی میڈیا مخالف پالیسی کی مذمت کی۔

انہوں نے کہا کہ ’میڈیا ہاؤسز، صحافی برادری اور سیاستدانوں کو نام نہاد ففتھ جنریشن اور ہائبرڈ وار فیئر کے نام پر نشانہ بنایا جارہا ہے، جو معاشرے کی بنیادی ڈھانچے کو نقصان پہنچا رہا ہے‘۔

اس موقع پر سابق چیئرمین سینیٹ نیئر بخاری نے ریلی کے شرکا سے خطاب میں کہا کہ حکومت نے عام آدمی کے حالات زندگی کو تباہ کردیا ہے اور یہ سینسرشپ نافذ اور آزادی اظہار رائے سے انکار کرکے غیرقانونی اقدامات اٹھارہی ہے۔

علاوہ ازیں احتجاجی ریلیاں چاروں صوبائی دارالحکومتوں اور ملک کے دیگر شہروں اور علاقوں میں بھی منعقد ہوئیں۔

ادھر کراچی پرس کلب کے سامنے بھی کراچی یونین آف جرنلسٹس کی جانب سے احتجاج کیا گیا، جس سے صحافیوں، مزدور رہنماؤں اور مختلف میڈیا ہاؤسز کی سی بی اے یونینز کے نمائندوں نے خطاب کیا۔

مزید برآں اسی طرح کی ایک ریلی سکھر یونین آف جرنلسٹس کی جانب سے بھی منعقد کی گئی۔

Exit mobile version