پاکستان سپر لیگ 5 کے بارے میں پانچ اہم باتیں

جنوری 2020 کے اختتام کے قریب آتے ہی پاکستان میں شائقین کرکٹ اب تیاری کر رہے ہیں پاکستان سپر لیگ فائیو کے مقابلے دیکھنے کی۔

جوں جوں بیس فروری قریب آ رہی ہے کرکٹ کے مداحوں کا جوش بھی بڑھتا جا رہا ہے۔ چونکہ یہ پہلی بار ہے کہ پی ایس ایل کا مکمل ٹورنامنٹ پاکستان میں کھیلا جا رہا ہے، اس لیے کرکٹ فینز میں جوش بھی زیادہ نظرآ رہا ہے۔

20 فروری سے شروع ہونے والے ٹورنامنٹ کے لیے کاونٹ ڈاون کا آغاز ہو گیا ہے اور #PSL5 اور #PSL2020 کے ہیش ٹیگ سوشل میڈیا پر نظر آنا شروع ہو گئے ہیں۔

جو لوگ پی ایس ایل 5 کے میچ سٹیڈیم جا کر دیکھنا چاہتے ہیں، ان کے لیے پانچ باتوں کو مد نظر مفید ہو گا۔

تصویر
اس کے لیے پہلا مرحلہ ہے ٹکٹس کی خریداری کا۔ پی ایس ایل کے میچوں کے لئے ٹکٹوں کی جنرل سیل 28 جنوری سے ٹی سی ایس کے مراکز کے ذریعے شروع ہو گئی ہے

پی ایس ایل 5 کے ٹکٹوں کی خریداری

جو لوگ سٹیڈیم جا کر میچ دیکھنے کا منصوبہ بنائے بیٹھے ہیں ان کو اپنی تیاری آج بلکہ ابھی سے شروع کر دینی چاہیے۔

اس کے لیے پہلا مرحلہ ہے ٹکٹوں کی خریداری کا۔ پی ایس ایل کے میچوں کے لیے ٹکٹوں کی فروخت 28 جنوری سے ٹی سی ایس کے مراکز کے ذریعے شروع ہو گئی ہے۔

ٹکٹوں کے لیے وی آئی پی، پریمیئم، فرسٹ کلاس اور جنرل کیٹیگریز بنائی گئی ہیں۔ سب سے مہنگا ٹکٹ افتتاحی میچ کا ہے جس میں وی آئی پی کیٹیگری کا ٹکٹ چھ ہزار، پریمیئم کا چار ہزار، فرسٹ کلاس ڈھائی ہزار اور جنرل کیٹیگری کا ٹکٹ ایک ہزار روپے کا ٹکٹ ہے۔

تصویر
ٹکٹوں کی آن لائن بکنگ کی سہولت بھی 20 جنوری سے شروع ہو چکی ہے

فائنل میچ کے لیے ٹکٹوں کی قیمتیں سو سے پانچ ہزار کے درمیان ہیں جبکہ دیگر میچوں کے لیے 250 روپے سے چار ہزار کے درمیان ہیں۔

دوسری جانب میچ دیکھنے کے لیے ٹکٹوں کی آن لائن بکنگ کی سہولت بھی 20 جنوری سے شروع ہو چکی ہے۔

اس لیے اگر آپ ٹکٹ خریدنے کا ابھی صرف پلان ہی کر رہے ہیں تو اب اس خیال کو عملی جامہ پہنا لیں کیونکہ اس میں تاخیر آپ کے منصوبوں پر پانی پھیر سکتی ہے۔

پی ایس ایل 5 کے میچوں کا شیڈول

سٹیڈیم جا کر میچ دیکھنے سے پہلے ذرا اس ٹورنامنٹ کے میچوں کے مکمل شیڈول پر نظر دوڑا لیں۔ پاکستان سپر لیگ کے پانچویں ایڈیشن میں کل 34 میچ کھیلے جائیں گے جن میں 26 میچ شام سات بجے شروع ہوں گے جبکہ آٹھ میچ دن دو بجے۔

پی ایس ایل کا افتتاحی میچ 20 فروری کو شام سات بجے کراچی کے نیشنل سٹیڈیم میں کھیلا جائے گا جس میں کوئٹہ گلیڈی ایٹرز اور اسلام آباد یونائیٹڈ کی ٹیمیں مد مقابل ہوں گی۔

ٹورنامنٹ کا دوسرا میچ کراچی میں ہی کراچی کنگز اور پشاور زلمی کے درمیان 21 فروری کو دن دو بجے شیڈول ہے۔

21 فروری کو ہی تیسرے میچ کے لیے میدان لاہور میں سجے گا جہاں قذافی سٹیڈیم میں لاہور قلندر اور ملتان سلطان کی ٹیمیں آمنے سامنے ہوں گی۔ کراچی اور لاہور کے کرکٹ گراونڈز سجنے کے ساتھ ساتھ ٹورنامنٹ کا آٹھواں میچ ملتان شہر میں واقع ملتان کرکٹ سٹیڈیم میں کھیلا جا ئے گا جہاں شام سات بجے مقامی ٹیم ملتان سلطانز اور پشاور زلمی کی ٹیمیں آمنے سامنے ہوں گی۔

راولپنڈی کرکٹ سٹیڈیم میں کھیلے جانے والا پہلا میچ 27 فروری کو اسلام آباد یونائیٹڈ اور کوئٹہ گلیڈی ایٹرز کے درمیان ہو گا۔

پاکستان سپر لیگ میں سب سے زیادہ میچ لاہور میں کھیلے جائیں گے جس میں 22 مارچ کو کھیلے جانے والے فائنل سمیت کل 14 میچ شامل ہیں۔

قذافی سٹیڈیم لاہور میں ہی ٹورنامنٹ کے دو الیمنیٹر میچ 18 اور 20 مارچ کو کھیلے جائیں گے۔

نیشنل سٹیڈیم کراچی میں کل نو میچ کھیلے جائیں گے جن میں ایک کوالیفائر میچ بھی شامل ہے جو 17 مارچ کو ہو گا۔

ٹورنامنٹ میں آٹھ میچ راولپنڈی کرکٹ سٹیڈیم جبکہ تین میچ ملتان کرکٹ سٹیڈیم میں کھیلے جائیں گےـ

تصویر
ٹورنامنٹ کا دوسرا میچ کراچی میں ہی کراچی کنگز اور پشاور زلمی کے درمیان 21 فروری کو دن دو بجے شیڈول ہے

پی ایس ایل 5 میں کھیلنے والی ٹیمیں

پی ایس ایل 5 میں کھیلنے والی چھ ٹیموں کے کھلاڑیوں کے ناموں کا اعلان دسمبر 2019 میں کر دیا گیا تھا۔

اب تک ان چھ ٹیموں میں سے اسلام آباد یونائیٹڈ، کوئٹہ گلیڈی ایٹرز، لاہور قلندرز اور کراچی کنگز کی ٹیموں کے لیے کپتان کے ناموں کا اعلان کر دیا گیا ہے جبکہ ملتان سلطانز اور پشاور زلمی کے کپتانوں کے نام ابھی سامنے نہیں آئے ہیں۔

کوئٹہ گلیڈی ایٹرز کی کپتانی بلے باز سرفراز احمد کو سونپی گئی ہے جبکہ اس ٹیم میں پاکستان سے تعلق رکھنے والے نمایاں کھلاڑیوں میں محمد نواز، احمد شہزاد، انور علی، اور احسان علی شامل ہیں۔

اسلام آباد یونائٹڈ نے ٹیم کی کپتانی 21 برس کے آل راونڈر شاداب خان کو سونپ کر سب کو حیران کر دیا ہے۔

اس ٹیم میں پاکستان سے تعلق رکھنے والے نمایاں کھلاڑیوں میں عماد بٹ، رضوان حسین، آصف علی اور فہیم اشرف شامل ہیں۔

تصویر
کوئٹہ گلیڈی ایٹرز کی کپتانی بلے باز سرفراز احمد کو سونپی گئی ہے جبکہ اس ٹیم میں پاکستان سے تعلق رکھنے والے نمایاں کھلاڑیوں میں محمد نواز، احمد شہزاد، انور علی، اور احسان علی شامل ہیں

ملتان سلطانز نے اب تک اپنی ٹیم کی کپتانی تو کسی کو نہیں سونپی ہے ، تاہم یہ اعزاز شان مسعود کو دیے جانے کا قوی امکان ہے۔

اس ٹیم میں پاکستان سے تعلق رکھنے والے نمایاں کھلاڑیوں میں محمد عرفان، شاہد آفریدی، سہیل تنویر اور روحیل نذیر شامل ہیں۔

پشاور زلمی کی کپتانی بھی ابھی تک کسی کو نہیں سونپی گئی ہے، تاہم حال ہی میں پشاور زلمی میں آنے والے شعیب ملک کو کپتانی ملنے کا قوی امکان ہے۔

پشاور زلمی میں پاکستان سے تعلق رکھنے والے کھلاڑیوں میں وہاب ریاض، حسن علی، کامران اکمل اور امام الحق اور شامل ہیں۔

کراچی کنگز کی کپتانی دی گئی ہے آل راونڈر عماد وسیم کو اور ان کے ساتھ ٹیم میں پاکستان سے تعلق رکھنے والے کھلاڑیوں میں بابر اعظم، محمد عامر، شرجیل خان عمر خان سمیت دیگر کھلاڑی شامل ہیں۔

لاہور قلندر کی ٹیم میں حیرت انگیز طور پر آل راونڈر سہیل اختر کو کپتان نامزد کیا گیا ہے جبکہ اس ٹیم میں پاکستان سے تعلق رکھنے والے کھلاڑیوں میں فخر زمان، حارث رؤف، شاہین آفریدی اور محمد حفیظ شامل ہیں۔

تصویر
لاہور قلندر کی ٹیم میں حیرت انگیز طور پر آل راونڈر سہیل اختر کو کپتان نامزد کیا گیا ہے جبکہ اس ٹیم میں پاکستان سے تعلق رکھنے والے کھلاڑیوں میں فخر زمان، حارث رؤف، شاہین آفریدی اور محمد حفیظ شامل ہیں

بین الاقوامی کھلاڑی

پاکستان سپر لیگ 5 میں اس بار ایک اور خاص بات بڑی تعداد میں بین الاقوامی کھلاڑیوں کی شمولیت ہے، جس کے باعث اس بار پی ایس ایل ٹورنامنٹ میں شائقین کرکٹ بین الاقوامی کھلاڑیوں کو پاکستانی کرکٹ گراونڈز میں ہونے والے تمام میچوں میں کھیلتا دیکھ سکیں گے۔

پی ایس ایل کی چھ مختلف ٹیموں میں کھیلنے والے نمایاں بین الاقوامی کھلاڑیوں میں کرس لِن، شین واٹسن، ڈیل سٹین، روی بوپارہ، کیمرون ڈیلپورٹ، بین کٹنگ، بین ڈنک، جیمز ونس، پولارڈ، ایلیکس ہیلز، کرس جورڈن، کیمو پال، جیسن رائے، شین واٹسن، کیرون پولارڈ اور لائم ڈاسن شامل ہیں۔

تصویر

پاکستان سپر لیگ 2020 کا ترانہ

پاکستان سپر لیگ میں کرکٹ شائقین کا جوش و جزبہ گرماتا ہے ٹورنامنٹ کے لیے تیار کیا جانے والا ترانہ اور اس بار پاکستان سپر لیگ فائیو کا آفیشل ترانہ 'تیار ہیں' بھی 28 جنوری کی رات پاکستان کے نیوز چینلز کے ساتھ ساتھ پی ایس ایل یو ٹیوب چینل پر بھی ریلیز کیا جا رہا ہے۔

پی ایس ایل کی پریس ریلیز کے مطابق اس ترانے میں کل 22 سازوں کا استعمال کیا گیا ہے جبکہ اس میں بیک وقت راک، فوک اور پاپ سنگرز کی آوازیں شامل ہیں۔

اس ترانے میں معروف راک گلوکار علی عظمت، فوک گلوکار عارف لوہار، 'آواز' بینڈ سے شہرت پانے والے ہارون رشید اور مشہور پاپ گلوکار عاصم اظہر آواز کا جادو جگائیں گے۔

اپنی رائے کا اظہار کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *