پاکستان میں کورونا سے مزید 676 صحتیاب، فعال کیسز 11 ہزار 945 رہ گئے

پاکستان میں عالمی وبا کورونا وائرس کے پھیلاو میں بڑی حد تک کمی آچکی ہے اور روزانہ رپورٹ ہونے والے کیسز کی تعداد کم جبکہ صحتیاب ہونے والوں کی تعداد میں اضافہ ہورہا ہے۔

ملک میں اب تک کورونا کے 2 لاکھ 90 ہزار 958 کیسز میں سے 2 لاکھ 72 ہزار 804 صحتیاب ہوچکے ہیں جس جے بعد فعال کیسز صرف 11 ہزار 945 رہ گئے ہیں۔

اسی طرح آج 20 اگست کی صبح تک کورونا وائرس کے مزید 96 کیسز اور ایک موت کی تصدیق ہوئی جبکہ 676 افراد صحتیاب بھی ہوگئے۔

یاد رہے کہ ملک میں کورونا وائرس کے ابتدائی دو کیسز ایک ہی دن یعنی 26 فروری کو رپورٹ ہوئے تھے جن کا تعلق کراچی اور گلگت بلتستان سے تھا۔تحریر جاری ہے‎

وبا کی نشاندہی ہونے کے فورا بعد تعلیمی اداروں کو بند کرنے کے علاوہ مختلف پابندیاں عائد کردی گئی تھیں۔

تاہم وقت گزرنے کے ساتھ ان پابندیوں کے باعث معاشی صورتحال بھی بگڑ رہی تھی چنانچہ حکومت نے مختلف شعبوں کو کھولنے اور اسمارٹ لاک ڈاؤن کے طریقہ کار کو اپنایا۔

جون کے مہینے میں یہ وائرس پاکستان میں اپنے عروج پر پہنچا اور یومیہ 6 ہزار کیسز اور 100 سے زائد اموات رپورٹ ہونے لگیں تاہم جولائی سے صورتحال بہتری کی جانب گامزن ہوگئی جس کا سلسلہ اگست میں بھی جاری ہے۔

آج 20 اگست کو ملک میں وبا کی صورتحال کچھ اس طرح ہے۔

پنجاب

آبادی کے لحاظ سے ملک کے سب سے بڑے صوبے پنجاب میں مزید 58 افراد کا کورونا ٹیسٹ مثبت آگیا۔

سرکاری اعدادو شمار کے مطابق نئے کیسز سامنے آنے کے بعد پنجاب میں مجموعی کیسز کی تعداد 95 ہزار 800 ہوگئی۔

تاہم گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران وبا کے باعث کسی مریض کی ہلاکت رپورٹ نہیں ہوئی اور اب تک پنجاب میں اموات کی تعداد 2 ہزار 186 ہے۔

اسلام آباد

وفاقی دارالحکومت اسلام آباد میں کورونا وائرس کے مزید 13 کیسز رپورٹ ہوگئے۔

سرکاری اعداد و شمار کے مطابق 13 نئے کیسز کے بعد اسلام آباد میں وائرس سے متاثر ہونے والوں کی تعداد 15 ہزار 425 ہوچکی ہے۔

تاہم خوشقسمتی سے وبا سے مزید کوئی ہلاکت رپورٹ نہیں ہوئی البتہ اب تک اسلام آباد میں کووڈ19 کے 175 مریض انتقال کرچکے ہیں۔

گلگت بلتستان

چند روز سے گلگت بلتستان میں کورونا کیسز میں تیزی دیکھنے میں آئی ہے اور گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران مزید 18 کیس اور ایک ہلاکت رپورٹ ہوئی۔

ملک میں کورونا وائرس کی صورتحال پر نظر رکھنے والے پورٹل کے مطابق گلگت بلتستان میں اب تک 2 ہزار 583 افراد وبا کا شکار بن چکے ہیں۔

علاوہ ازیں مزید ایک فرد کی ہلاکت سے اس خطے میں اموات کی تعداد 63 ہوگئی ہے۔

آزاد کشمیر

ملک میں کورونا وائرس سے سب سے کم متاثر ہونے والے خطے آزاد کشمیر میں مزید 7 افراد وبا کا شکار بنے۔

سرکاری سطح پر کورونا وائرس کے اعداد و شمار کی ویب سائٹ کے مطابق آزاد کشمیر میں متاثرہ افراد کی تعداد 2 ہزار 219 تک جا پہنچی ہے۔

تاکم خوشقسمتی سے مزید کوئی جانی نقصان رپورٹ نہیں ہوا اور اموات کی تعداد 62 ہی ہے۔

صحتیابی کی شرح

ملک میں روزانہ رپورٹ ہونے والے کیسز کی تعداد جہاں کم ہوئی ہے وہیں صحتیاب ہونے والے افراد کی تعداد میں مسلسل اضافہ ہورہا ہے۔

کووڈ19 کے سرکاری پورٹل کے مطابق گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران ملک میں مزید 676 مرض شفایاب ہوئے۔

اس طرح اب تک پاکستان میں کورونا وائرس سے متاثر ہونے والے 93.7 فیصد یعنی 2 لاکھ 72 ہزار 804 مریض صحتیاب ہوچکے ہیں۔

مجموعی صورتحال

ملک میں عالمی وبا کے کیسز، اموات اور صحتیاب افراد کی تعداد میں اضافے کے بعد اگر مجموعی صورتحال پر نظر ڈالیں تو وہ کچھ اس طرح ہے:

مصدقہ کیسز: 290958

اموات: 6209

صحتیاب: 272804

فعال کیسز: 11945

ملک میں اس وائرس سے سب سے زیادہ متاثر صوبے سندھ اور پنجاب ہیں، صوبہ سندھ میں متاثرین کی مجموعی تعداد ایک لاکھ 27 ہزار 60 ہے جبکہ پنجاب میں یہ تعداد 95 ہزار 800 تک پہنچ چکی ہے۔

صوبہ خیبرپختونخوا میں کورونا وائرس سے 35 ہزار 468 افراد متاثر ہوچکے ہیں جبکہ صوبہ بلوچستان میں وبا میں مبتلا ہونے والوں کی تعداد 12 ہزار 403 ہے۔

علاوہ ازیں وفاقی دارالحکومت اسلام آباد میں 15 ہزار 425، آزاد کشمیر میں 2 ہزار 219 اور گلگت بلتستان میں 2 ہزار 583 افراد عالمی وبا کا شکار ہوچکے ہیں۔

ملک میں اموات کی صورتحال کچھ یوں ہے:

سندھ: 2343

پنجاب: 2186

خیبرپختونخوا: 1242

بلوچستان: 139

اسلام آباد: 175

آزاد کشمیر: 61

گلگت بلتستان: 63

پاکستان میں کورونا وائرس

خیال رہے کہ ملک میں کورونا وائرس کا پہلا کیس 26 فروری 2020 کو کراچی میں سامنے آیا تھا اور 25 مارچ تک کیسز کی تعداد ایک ہزار تک پہنچ چکی تھی۔

تاہم اس کے بعد مذکورہ وائرس نے پاکستان میں اپنے پنجے گاڑنا شروع کردیے اور اب تک 2 لاکھ 90 ہزار سے زائد افراد کورونا وائرس سے متاثر ہوچکے ہیں، جبکہ اموات 6 ہزار سے زائد ہیں۔

ملک میں کورونا وائرس کے پہلے کیس سے لے کر اب تک کیا صورتحال رہی اور کس روز کتنے کیسز اور اموات سامنے آئیں؟ مکمل تفصیل جاننے کے لیے کلک کریں۔

error: