پہلی خاتون لیفٹیننٹ جنرل پر بنی فلم ’ایک ہے نگار‘ کی ریلیز کا اعلان

پاکستان آرمی کی پہلی خاتون لیفٹیننٹ جنرل نگار جوہر کی کاوشوں پر بنائی گئی ٹیلی فلم ’ایک ہے نگار‘ کی ریلیز کی تاریخ کا اعلان کردیا گیا۔

’ایک ہے نگار‘ میں ماہرہ خان اسکرین پر پاک فوج کی پہلی خاتون لیفٹیننٹ جنرل نگار جوہر کے روپ میں دکھائی دیں گی۔

مذکورہ ٹیلی فلم کے ٹیزرز رواں برس اگست میں ریلیز کیے گئے تھے اور خیال کیا جا رہا تھا کہ ممکنہ طور پر ٹیلی فلم کو ستمبر میں ریلیز کیا جائے گا۔

تاہم اب فلم کی ٹیم نے اس کی تاریخ کا اعلان کرتے ہوئے اسے رواں ماہ 23 اکتوبر کو ریلیز کرنے کا اعلان کردیا۔

ماہرہ خان اور ٹیلی فلم کی پروڈیوسر نینا کاشف سمیت اسے نشر کرنے والے ٹی وی چینل کی جانب سے سوشل میڈیا پر کی گئی پوسٹس میں تصدیق کی گئی کہ ’ایک ہے نگار‘ کو رواں ماہ کے اختتام تک نشر کیا جائے گا۔

پوسٹس میں بتایا گیا کہ ٹیلی فلم کو 23 اکتوبر کی شب رات 8 بجے اے آر وائے ڈیجیٹل پر نشر کیا جائے گا۔

’ایک ہے نگار‘ کی کہانی معروف لکھاری عمیرہ احمد نے لکھی ہےجب کہ اس کی ہدایات عدنان سرور نے دی ہیں۔

ٹیلی فلم میں جہاں ماہرہ خان فوجی خاتون کےروپ میں دکھائی دیں گی، وہیں وہ اس کی شریک پروڈیوسر بھی ہیں۔

‘ایک ہے نگار‘ کو نینا کاشف اور ماہرہ خان نے مشترکہ طور پر پروڈیوس کیا ہے اور اسے ’سول فرائے‘ پروڈکشن ہاؤس کے بینر تلے ریلیز کیا جائے گا۔

ٹیلی فلم میں ماہرہ خان کے شوہر کا کردار بلال عباس کرتے دکھائی دیں گے۔

’ایک ہے نگار‘ کے جاری کیے گئے ٹیزرز میں ماہرہ خان کو بطور جنرل نگار دکھایا گیا تھا جب کہ ایک ٹیزر میں ان کی شادی اور پاک فوج میں شمولیت کی جھلکیاں بھی دکھائی گئی تھیں۔

'ایک ہے نگار' میں لیفٹیننٹ جنرل نگار جوہر کی زندگی اور کیریئر کی کہانی بیان کی گئی ہے اور اس کی زیادہ تر شوٹنگ راولپنڈی کے آرمی میڈیکل کالج میں کی گئی ہے، تاہم ٹیلی فلم کی شوٹنگ ایبٹ آباد سمیت دیگر علاقوں میں بھی کی گئی تھی۔

اپنی رائے کا اظہار کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *

error: