پی ایس ایل 2021: 200 سے زائد کھلاڑی اور عملہ ابوظبی پہنچ گئے

پاکستان سپر لیگ(پی ایس ایل) کے چھٹے ایڈیشن میں شرکت کے لیے 200 سے زائد کھلاڑی، عملہ اور پی سی بی حکام متحدہ عرب امارات پہنچ گئے ہیں۔

پاکستان کرکٹ بورڈ کی جانب سے جاری اعلامیے کے مطابق متحدہ عرب امارات نے جنوبی افریقی کھلاڑیوں کے ساتھ ساتھ بھارت اور جنوبی افریقہ کے براڈ کاسٹرز کے عملے کو بھی ویزے جاری کر دیے ہیں۔

یہ تمام کھلاڑی اور عملہ 24 سے 48 گھنٹے میں ممکنہ طور پر متحدہ عرب امارات پہنچ جائے گا۔

ویزے کے التوا کے سبب ابوظبی کی چارٹرڈ فلائٹ میں سوار نہ جانے والے کھلاڑی، سپورٹ اسٹاف اور عملہ آئندہ 48 گھنٹوں میں ایک اور چارٹرڈ فلائٹ سے ابوظبی پہنچ جائیں گے۔

ابھی تک لاہور اور کراچی سے چارٹرڈ فلائٹ کے ذریعے 200 سے زائد کھلاڑی، عملہ، سپورٹ اسٹاف اور آفیشلز متحدہ عرب امارات پہنچ چکے ہیں۔

ادھر کوئٹہ گلیڈی ایٹرز کے فاسٹ باؤلر نسیم شاہ دوبارہ سے بائیو سیکیور ببل کا حصہ بن گئے ہیں جہاں اس سے قبل بائیو سیکیور ببل کی خلاف ورزی پر لیگ سے باہر کردیا گیا تھا۔

البتہ لیگ میں واپسی پر نسیم شاہ کو بائیو سیکیور ببل پروٹوکول کو پورا کرنا ہو گا جس میں ببل کا حصہ بننے سے قبل 48 گھنٹوں میں منفی ٹیسٹ آنا لازمی ہے۔

ابوظبی کی چارٹرڈ فلائٹ پر روانگی سے قبل نسیم شاہ کو آئسولیشن میں رہنے کے ساتھ ساتھ دو منفی ٹیسٹ کے نتائج کا ثبوت بھی دینا ہو گا۔

خیال رہے کہ پاکستان سپر لیگ سیزن 6 کا آغاز 20 فروری کو کراچی سے ہوا تھا اور ایونٹ کے میچز اس مرتبہ ملک کے دو شہروں کراچی اور لاہور میں کھیلے جانے تھے تاہم 4 مارچ کو پاکستان سپر لیگ کو 7 کھلاڑیوں اور دیگر میں کورونا کیسز سامنے آنے کے بعد ملتوی کرنے کا فیصلہ کیا گیا۔

تاہم اپریل میں پی سی بی نے تمام اسٹیک ہولڈرز کی مشاورت سے یکم جون سے ایونٹ کے دوبارہ کراچی میں انعقاد کا فیصلہ کیا تھا اور کورونا وائرس کے خطرے کے پیش نظر لاہور میں میچز کے انعقاد کے منصوبے کو منسوخ کردیا گیا تھا۔

بعدازاں پاکستان میں کورونا وائرس کی تیسری لہر میں شدت اور سابقہ تجربات کے پیش نظر تمام فرنچائزوں نے پی سی بی سے لیگ کو متحدہ منتقل کرنے کی درخواست کی جسے منظور کر لیا گیا تھا اور اب میچز کے ابوظبی میں انعقاد کی منظوری بھی مل چکی ہے۔

اپنی رائے کا اظہار کریں

Your email address will not be published.