پی ایس ایل 6: پشاور زلمی کی جارحانہ بیٹنگ، کوئٹہ گلیڈی ایٹرز بڑے سکور کے باوجود شکست سے دوچار

پی ایس ایل 6 کا آٹھواں میچ کراچی میں کوئٹہ گلیڈی ایٹرز اور پشاور زلمی کے درمیان کھیلا گیا جس میں پشاور زلمی نے ایک سنسنی خیز مقابلے کے بعد کوئٹہ گلیڈی ایٹرز کو شکست دے دی ہے۔

کوئٹہ گلیڈی ایٹرز نے پشاور زلمی کو جیت کے لیے 199 رنز کا ہدف دیا تھا جسے پشاور زلمی نے تین وکٹوں سے جیت لیا۔

اپنی فتح کے بعد پشاور زلمی پوائنٹس ٹیبل پر پانچویں سے دوسرے نمبر پر آ گئے ہیں جبکہ کوئٹہ گلیڈی ایٹرز بدستور چھٹے نمبر پر ہیں۔

زلمی کی جانب سے حیدر علی نے صرف 28 گیندوں پر نصف سنچری بنا کر اپنی ٹیم کے رنز کو سہارا دیا لیکن اس سے اگلی ہی گیند پر وہ ڈیل سٹین کی بال پر فاف ڈوپلیسی کے ہاتھوں کیچ آؤٹ ہوگئے۔

میچ کا تین چوتھائی حصہ گزرنے تک پشاور زلمی مشکلات کے شکار دکھائی دے رہے تھے مگر پھر شرفین ردرفورڈ کی جانب سے دھواں دھار بیٹنگ نے پشاور کو میچ پر مکمل کنٹرول دے دیا۔

ردرفورڈ نے چار چھکوں اور ایک چوکے کی مدد سے 36 رنز کی ناقابلِ شکست اننگز کھیلی جبکہ ٹیم کے کپتان بولر وہاب ریاض نے بھی دو چھکے لگا کر اپنی ٹیم کے سکور میں 20 رنز کا قابلِ قدر اضافہ کیا۔

پشاور زلمی

کوئٹہ گلیڈی ایٹرز کی جانب سے سب سے زیادہ سکور کپتان سرفراز احمد نے کیا جنھوں نے 40 گیندوں پر 12 چوکوں اور ایک چھکے کی مدد سے 81 رنز بنائے۔

اس کے بعد اعظم خان نے چھ چوکوں اور دو چھکوں کی مدد سے 47 رنز بنائے۔

ان دو بلے بازوں نے مل کر کوئٹہ گلیڈی ایٹرز کے سکور کو سہارا دے کر تیزی سے بڑھایا جو شروع میں کافی مشکلات اور سست روی کا شکار تھا۔

سرفراز احمد اور اعظم خان کے درمیان چوتھی وکٹ کی شراکت میں 104 رنز صرف 52 گیندوں پر بنے۔

گلیڈی ایٹرز
کوئٹہ گلیڈی ایٹرز

ملتان سلطانز کی لاہور قلندرز پر آسان فتح

جمعے کو سیزن کا ساتواں میچ لاہور قلندرز اور ملتان سلطان کے درمیان کھیلا گیا جس میں ملتان سلطانز نے لاہور قلندرز کو سات وکٹوں سے شکست دے دی۔

ملتان نے تین وکٹوں کے نقصان پر 159 رنز بنا کر میچ کا نتیجہ اپنے حق میں کر لیا۔

ملتان کی جانب سے سب سے نمایاں اننگز محمد رضوان اور صہیب مقصود کی رہی جن کی شراکت نے لاہور قلندرز کے پہلے سے ہی کم ہدف کو اپنی ٹیم کے لیے اور آسان بنا دیا۔

محمد رضوان نے 49 گیندوں پر 12 چوکوں کی مدد سے 76 رنز بنائے جس کے بعد وہ شاہین شاہ آفریدی کی گیند پر کیچ آؤٹ ہوئے۔

مختصر سے ہدف کے تعاقب میں رضوان نے اتنی شاندار بیٹنگ کا مظاہرہ کیا کہ ان کے آؤٹ ہونے کے بعد مخالف ٹیم بھی ان کی بیٹنگ کی داد دیتی نظر آئی۔

آؤٹ ہونے تک رضوان اپنی ٹیم کو فتح کے قریب پہنچا چکے تھے۔

سلطانز
سلطانز

لاہور قلندرز کی اننگز کی خاص بات محمد حفیظ کی جارحانہ بیٹنگ رہی۔ انھوں نے 35 گیندوں پر 59 رنز بنائے اور رن آؤٹ ہوئے۔ لاہور نے اپنے مقررہ اوورز میں چھ وکٹوں کے نقصان پر 157 بنائے تھے۔

ملتان سلطانز نے ٹاس جیت کر پہلے بولنگ کا فیصلہ کیا تھا۔

لاہور قلندرز کی ٹیم: فخر زمان، محمد حفیظ، جو ڈینلی، سہیل اختر، بن ڈنک، سمٹ پٹیل، ڈیوڈ ویسا، احمد دانیال، شاہین شاہ آفریدی، حارث رؤف، سلمان مرزا

ملتان سلطانز کی ٹیم: محمد رضوان، کرس لین، جیمز ونس، رائلی روسو، صہیب مقصود، خوش دل شاہ، شاہد آفریدی، کارلوس بریتھ وائٹ، سہیل خان، عثمان قادر، شاہنواز دھانی

کرکٹ
،تصویر کا کیپشنسہیل اختر سات کے انفرادی سکور پر بریتھ وائٹ کی گیند پر آؤٹ ہوگئے۔
کرکٹ

اپنی رائے کا اظہار کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *