جعلی پاکستانیوں کی نشاندہی پر دس ہزارانعام ملے گا، چوہدری نثار

وفاقی وزیرداخلہ چوہدری نثار نے جعلی پاکستانیوں کی نشاندہی کرنے والے ہر فرد کو دس دس ہزار انعام دینے کا اعلان کیا ہے۔ وزیر داخلہ نے کہا کہ جعلی شناختی کارڈ کے خلاف مہم جاری ہے، 31 اگست کے بعد گرفتاریاں ہوں گی، ملک بدری ہوگی اور لوگ جیل بھیجے جائیں گے۔ چوہدری نثار کا کہنا تھا کہ 31 اگست کے بعد جعلی شناختی کارڈ رکھنے والے غیرملکیوں کے خلاف کارروائی ہوگی ، پہلے ماہ 2لاکھ 24ہزار شناختی کارڈز کی تصدیق ہوچکی ، اب تک 23ہزار جعلی شناختی کارڈ زکی نشاندہی ہوئی ہے۔ وزیر داخلہ نے کہا کہ اگلے ہفتے کے شروع میں ایک بڑی میٹنگ ہوگی ، جس میں آرمی چیف اور انٹیلی جنس ایجنسیز کے سربراہوں کو بھی بلایا جائے گا ، میٹنگ میں اب تک کی سیکیورٹی صورتحال کو ری ویو کیا جائے گا ۔

چوہدری نثار کے مطابق جو مشکوک شناختی کارڈ اور پاسپورٹ بنے وہ پچھلے 8 سال میں بنے ، ہم نے تو صرف کلین اپ کرنے کی کوشش کی ہے ،زیادہ ترمشتبہ شناختی کارڈز اورپاسپورٹ مشرف اورپیپلزپارٹی کے دورمیں بنے۔ وزیر داخلہ چوہدری نثار کا کہنا تھا کہ شناختی کارڈز کی تصدیق کے لیے ہیلپ لائن پر عوام نے 37 ہزار کالز کیں ،اب تک 23 ہزار ایسے افراد کی تصدیق ہوئی ہے جو لوگوں کے فیملی ٹریز میں نہیں تھے ،غیر قانونی افراد میں ایک چوتھائی غیر ملکی ہیں ۔ چوہدری نثار نے کہا کہ 22 ہزارلوگوں نے بتایا کہ ان کے فیملی ٹری میں غیرمتعلقہ شخص کا اندراج ہے،اب تک4 لوگوں نے نادرا سے رابطہ کرکے پاکستانی شہریت سے دستبرداری لی ، غیرقانونی شناختی کارڈزکی تصدیق پرسب سےزیادہ اعتراضات نادراکی طرف سےسامنےآئے۔

وفاقی وزیر داخلہ نے مزید کہا کہ پاکستان کےسرکاری پاسپورٹس انسانی اسمگلنگ کےلیےاستعمال ہوئے،اب تک 2ہزارسےزیادہ سرکاری پاسپورٹ منسوخ کیے گئے ، ملا منصور کے علاوہ اور بھی لوگوں کےشناختی کارڈزکاپتاچلاہے،نادرا حکام کے علاوہ کسی کو سفارتی پاسپورٹ جاری کرنے کا اپنا اختیار استعمال نہیں کیا، نادرا کے صرف ان حکام کو سفارتی پاسپورٹ دیا گیا، جنہیں ان کے کاموں کے لیے بیرون ملک جانا ضروری تھا۔ چوہدری نثار کا کہنا تھا کہ جعلی شناختی کارڈاورپاسپورٹ پاکستان کی قومی سلامتی کے لیے خطرناک ہے،ہماری تصدیق کے بغیر کسی شخص کو ڈی پورٹ کرکے پاکستان نہیں بھیجا جاسکتا ، گزشتہ 8 مہینوں کے درمیان غیرملکی ایئرلائنزکوایک کروڑروپےسےزائدجرمانہ کیاگیا، پہلےغیرملکی ایئرلائن کسی بھی شخص کوپاکستانی ظاہرکرکےپاکستان بھیج دیتےتھے :-

اپنی رائے کا اظہار کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *