حکیم الامت حضرت اشرف علی تھانوی صاحب کا حاملہ عورت کی نماز کے بارے حیرت انگیز فتویٰ

 

Ashraf_Ali_Thanwi

سوال :میں آٹھ مااہ کی حاملہ ہوں ، کیا اس صورت میں مجھے نماز کی رخصت ہے ؟ آمنہ خلیل ، کراچی
جواب :حاملہ کی نماز کے بارے میں مولانا اشرف علی تھانوی کا فتویٰ حسب ذیل ہے ، آپ اس سے نماز کی حاملہ کے لیے فضیلت جان سکتی ہیں :حکیم الامت حضرت اشرف علی تھانوی صاحب لکھتے ہیں:
"کسی کے لڑکا پیدا ہو رہا ہے لیکن ابھی سب نہیں نکلا، کچھ باہر نکلا ہے اور کچھ نہیں نکلا۔ ایسے وقت میں اگر ہوش و حواس باقی ہوں تو نماز کا پڑھنا فرض ہے، قضا کر دینا درست نہیں۔"
(بہشتی زیور، حصہ دوم، نماز کا بیان، ص88-89، مکتبہ عمر فاروق کراچی)

اپنی رائے کا اظہار کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *