تحریک انصاف نے حکومت کے ساتھ مذاکرات معطل کردئیے

mahmoodپاکستان تحریک انصاف کے نائب صدر  شاہ محمود قریشی کا کہنا ہے کہ حکومت نے ہمارے خلاف جارحانہ کریک ڈاؤن شروع کر دیا ہے ایسے ماحول میں مذاکرات کرنا بے سود ہے۔
میڈیا سے بات کرتے ہوئے شاہ محمود قریشی کا کہنا تھا کہ حکومت کی جانب سے ایک بار  پھر اسلام آباد کو کنٹینرز لگا کر  سیل کیا جا رہا ہے، ہمارے خلاف جارحانہ کریک ڈاؤن کیا جا رہا ہے اور ہمارے کارکنوں کو اسلام آباد آنے سے روکا جا رہا ہے، ایسی صورت حال میں حکومت کے ساتھ مذاکرات کرنا بے سود ہے اس لئے ہم نے مذاکرات کا جو سلسلہ شروع کیا تھا اسے معطل کر رہے ہیں۔ شاہ محمود قریشی کا کہنا تھا کہ انھوں نے حکومت کی مذاکراتی ٹیم کے سربراہ گورنر پنجاب چوہدری محمد سرور سے درخواست کی ہے کہ تمام راستے کھولے جائیں اور ہمارے کارکنوں کو  آنے کی اجازت دی جائے تو ہم مذاکرات کے لئے تیار ہیں۔
شاہ محمود قریشی نے کہا کہ حکومت نے آئی جی اسلام آباد آفتاب چیمہ کو  ہٹا دیا ہے اور ان کی جگہ کسی دوسرے فرد کو  اضافی ذمہ داریاں دی جائیں گی تا کہ ہمارے خلاف کریک ڈاؤن کیا جا سکے۔ آفتاب چیمہ نے پہلے بھی ہمارے کارکنوں کے خلاف کریک ڈاؤن سے انکار کر دیا تھا کیونکہ انھیں اندازہ تھا کہ اگر تحریک انصاف کے کارکنوں پر  لاٹھی جارچ کیا گیا تو حالات کشیدہ ہو سکتے ہیں۔ ان کا کہنا تھا کہ گزشتہ روز میرے گھر پر حملہ کروایا گیا اور اس کی ایف آئی آر بھی درج نہیں کی جا رہی، یہ کیسے حکمران ہیں کہ ایک طرف تو مذاکرات کی بات کرتے ہیں اور دوسری جانب ہمارے گھروں پر حملے کرتے ہیں اور ہمارے خلاف کریک ڈاؤن کیا جا رہا ہے۔

اپنی رائے کا اظہار کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *