بھارت حیران رہ گیا، پاکستان سندھ طاس معاہدہ کہاں لےگیا؟

واشنگٹن -پاکستان نے جنگ کی دھمکیاں دیتے، بڑھکیں لگاتے بھارت کو ایک اور منہ توڑ جواب دیا ہے، سندھ طاس معاہدے کا معاملہ ورلڈ بینک میں اٹھا دیا ہے۔ واشنگٹن میں پاکستانی سفارتخانے کی جانب سے جاری بیان کے مطابق اٹارنی جنرل اشتر اوصاف علی کی سربراہی میں پاکستانی وفد نے ورلڈ بینک کے واشنگٹن میں موجود ہیڈکوارٹرز میں اعلیٰ عہدے داروں سے ملاقات کی اور حال ہی میں پاکستان کی جانب سے سندھ طاس معاہدے کے آرٹیکل 9 کے تحت کی جانے والی ثالثی کی درخواست پر بات چیت کی گئی۔ ورلڈ بینک نے یقین دہانی کرائی کے وہ اس سلسلے میں غیر جانب دار رہتے ہوئے بروقت اپنی ذمہ داریاں پوری کرے گا۔ یاد رہے کہ سفارتی محاذ پر پاکستان کے ہاتھوں ذلت آمیز شکست کے بعد بھارت سندھ طاس معاہدے کی منسوخی اور پاکستانی دریاؤں کا پانی بند کرنے کی دھمکیاں دے رہا ہے۔ دونوں ملکوں کے درمیان سندھ طاس معاہدہ عالمی بینک کی ثالثی میں ستمبر 1960 میں ہوا تھا جس پر پاکستان کی جانب سے اس وقت کے صدر ایوب خان جبکہ بھارت کی جانب سے وزیر اعظم جواہر لال نہرو نے دستخط کیے تھے۔ سندھ طاس معاہدے کے تحت مشرقی دریاؤں ستلج، بیاس اور راوی کے پانی پر ہندوستان کو مکمل حق دیا گیا جبکہ مغربی دریاؤں سندھ، جہلم اور چناب کا پانی پاکستان کو استعمال کرنے کی اجازت دی گئی :-

اپنی رائے کا اظہار کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *