10 محرم کو یہودی کیوں روزہ رکھتے ہیں؟

12

واشنگٹن ۔ دسویں محرم الحرام کو اکثر مسلمان روزہ رکھتے ہیں لیکن دلچسپ بات یہ ہے کہ اسی روز اہل یہود بھی روزہ رکھتے ہیں، اور صدیوں سے رکھتے چلے آ رہے ہیں، لیکن اس کی وجہ خاصی مختلف ہے ۔ نیوز سائٹ سی این این پر شائع ہونے والے ایک مضمون میں مصنف ہارون مغل تحریر کرتے ہیں کہ اہل یہود قوم بنی اسرائیل کی فرعون کے ظلم سے نجات کی یاد میں 10 محرم الحرام کے دن روزہ رکھتے ہیں۔ وہ لکھتے ہیں کہ روایات کے مطابق ایک بار پیغمبر اسلام ﷺ کی ملاقات یہودیوں کے ایک گروہ سے ہوئی جنہوں نے 10 محرم الحرام کے دن روزہ رکھا ہوا تھا۔ جب آپ ﷺ نے ان سے استفسار فرمایا کہ انہوں نے روزہ کیوں رکھا ہوا تھا تو ان لوگوں کا کہنا تھا کہ یہ دن فرعون کے ظلم و ستم سے موسیٰ علیہ السلام کی قوم کی نجات کا دن ہے، لہٰذا وہ اس دن روزہ رکھتے ہیں۔ مضمون نگار کے مطابق روایات میں آیا ہے کہ آپ ﷺ نے بھی اس موقع پر روزہ رکھا۔ تاریخ کے ان واقعات سے ظاہر ہوتا ہے کہ شہادت حسین رضی اللہ تعالیٰ عنہ سے قبل بھی 10 محرم الحرام کے دن کی ایک خاص اہمیت تھی اور اس دن روزہ بھی رکھا جاتا تھا، البتہ حسین رضی اللہ تعالیٰ عنہ کی نسبت سے اس دن کے معنی و مطالب ہی اور ہوگئے:۔

اپنی رائے کا اظہار کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *