بھارتی وزیر اعلیٰ کو 44 ہزار لڑکیوں نے شادی کی پیشکش کر دی

بھارتی صوبے بہار کے وزیر اعلیٰ تیجاسوی یادیو ہے کو ایک بڑی تعداد میں وٹس ایپ  پیغامات نے حیران کر دیا۔ انہوں نے جب دیکھا کہ ان کے وٹس ایپ نمبر پر 44 ہرار رشتوں کی پیشکش آئی ہیں تو وہ حیران رہ گئے۔ انہوں نے یہ نمبر لوگوں کو اپنی شکایات کے اظہار کے لیے دیا تھا۔ پریا، انوپاما، منیشا، کنچن، اور دیویکا نامی لڑکیاں بھی ان 44000 امیدواروں میں شامل تھیں جو نئے سیاسی لیڈر سے شادی کے رشتے میں منسلک ہونے کی خواہش رکھتی تھیں۔ انہیں کل 47 ہزار پیغامات موصول ہوئے جن میں سے صرف 3000 ملک میں سڑکوں کی بہتری کی استدعا پر مشتمل تھے اور باقی۔۔۔

یادیو کا کہنا تھا کہ رشتے کی امیدوار لڑکیوں نے اپنی تصاویر، تعلیمی ڈگریاں، جسمانی حالت، سکن کلر اور ہائیٹ تک بتائی ہوئی تھی۔ کرکٹ چھوڑ کر سیاست میں آنے والے یادیو کی عمر صرف 26 سال ہے اور وہ آر جے ڈی چیف لالو پرساد اور سابقہ چیف منسٹر رابری دیوی  کے دوسرے بیٹے ہیں۔ انہوں نے بتایا کہ لڑکیوں کو لگا کہ یہ نمبر ان کا ذاتی ہے اس لیے انہوں نے پرسنل پیغامات بھیجنے شروع کر دیے۔ مذاق کرتے ہوئے یادیو کا کہنا تھا کہ اگر وہ شادی شدہ ہوتے تو یہ پیغامات ان کے لیے مصیبت کھڑی کر سکتے تھے۔ انہوں نے کہا کہ خدا کا شکر ہے میں ابھی کنوارہ ہوں۔ شادی کے بارے میں ان کا کہنا تھا کہ وہ ارینج میرج کا ارادہ رکھتے ہیں۔ گزشتہ سال ایک طالب علم کی سوشل میڈیا پر موصول ہونے والی شکایت پر یادیو نے ایکشن لیتے ہوئے اس کو جائز حق دلوایا تھا تا کہ بچے کی تعلیم میں کوئی حرج نہ آئے۔

اپنی رائے کا اظہار کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *