موٹروے اہلکاروں کو چئیرمین این ایچ اے کا چالان کرنا مہنگا پڑگیا

Image result for motorway challan

اسلام آباد - ٹریفک قوانین کی خلاف ورزی پر موٹروے پولیس اہلکاروں کو چیئرمین نیشنل ہائی وے اتھارٹی (این ایچ اے) کی گاڑی کا چالان بھاری پڑ گیا۔ تفصیلات کے مطابق چیئرمین این ایچ اے کی گاڑی انٹرچینج پر نہ روکے جانے پر اگلے انٹرچینج پر موٹروے پولیس اہلکاروں نے گاڑی روکی تو ڈرائیور نے انہیں کارڈ دکھاتے ہوئے بتایا کہ چیئرمین این ایچ اے ہمارے ساتھ موجود ہیں تاہم اس کے باوجود موٹروے پولیس اہلکار ضیاءاللہ نے ان کا چالان کر دیا۔
مذکورہ اہلکار کے مطابق چالان ہونے پر چیئرمین این ایچ اے اتنے برہم ہوئے کہ گاڑی سے باہر نکل آئے اور سخت زبان استعمال کی جبکہ بعد میں مذکورہ اہلکار سمیت وہاں موجود دیگر کا تبادلہ ہی کروا دیا۔ ان اہلکاروں میں سے کچھ اہلکاروں نے تبادلے کے خلاف احتجاج بھی کیا جو اور بھی مہنگا پڑ گیا کیونکہ دو سے ڈھائی ماہ بعد احتجاج نہ کرنے والے اہلکار تو واپس آ گئے لیکن دوسرے اہلکاروں کا مزید تبادلہ کر دیا گیا۔
ایک سینئر صحافی نے جب اس بابت این ایچ اے سے معلومات حاصل کرنے کی کوشش کی تو انہیں بتایا گیا کہ ملازمین کیلئے ضروری ہوتا ہے کہ اگر انہیں پتہ چل جائے کہ گاڑی میں چیئرمین بیٹھا ہے تو وہ چالان کرنے کے بعد انہیں سیلوٹ ضرور کرتے ہیں جبکہ چیئرمین نے چالان کرنے والے اہلکاروں سے متعلق بتایا کہ انہوں نے اپنا یونیفارم ٹھیک نہیں پہنا ہوا تھا اور شیو بھی بڑھی ہوئی تھی اور یہی وجہ ہے کہ ان کاتبادلہ کیا گیا :-

اپنی رائے کا اظہار کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *