نوکری کے بہانے جنسی ہراسگی، نڈر خاتون نے صحافی کا راز کھول دیا

new

لاہور۔ پاکستان سمیت دنیا بھر میں کہیں بھی خواتین کیلئے گھر کی چار دیواری سے باہر نکل کر کام کرنا آسان بات نہیں ہے کیونکہ جب بھی کوئی خاتون گھر سے باہر قدم رکھتی ہے تو متعدد خطرات اس کے سامنے سانپ کی طرح پھن پھیلائے کھڑے ہوتے ہیں جن میں سب سے زیادہ سنگین دفاتر میں جنسی طور پر ہراساں کرنا ہے ۔ ایسا ہی ایک واقعہ ایک فری لانس رائٹر خاتون کے ساتھ پیش آیا تاہم اس نے ہمت کرتے ہوئے اپنے ساتھ پیش آنے والے واقعے کے ثبوت پاکستان کے نجی اخبار کو پیش کردیے اور جنسی درندے کو پوری دنیا میں بے نقاب کردیا۔
پاکستان کے انگریزی روزنامے ایکسپریس ٹریبیون پر عامرہ ہاشم نامی لڑکی نے ایک بلاگ لکھا ہے جس میں اس نے بتایا ہے کہ دو ماہ پہلے اس نے ایک پاکستانی صحافی ”وجاہت کاظمی جو خود کو سی این این، بی بی سی ، ڈان نیوز، سما نیوز اور ہفنگٹن پوسٹ کا تجربہ کار ظاہر کرتا ہے“ کے ساتھ مل کر فری لانس رائٹر کے طور پر کام کرنا شروع کیا۔

’’نام نہاد صحافی وجاہت کاظمی کی جانب سے نوکری کیلئے دیا جانے والا اشتہار‘‘


لڑکی نے بتایا کہ ایک مہینہ کام کرنے کے بعد جب پیسے دینے کی باری آئی تو نام نہاد صحافی نے انتہائی گھٹیا گفتگو شروع کردی اور اسے پہلے پہل جنسی گفتگو کرنے پر ابھارنے لگا جس کے بعد اس نے پیسوں کی ادائیگی کے عوض جسمانی تعلق قائم کرنے کی خواہش کا اظہار کیا۔ میں نے اس جنسی درندے کو ہر طرح سے پیسے دینے کیلئے قائل کرنے کی کوشش کی تاہم وہ ہر بار حیلے بہانے کرتا رہا اور کسی نہ کسی طرح گفتگو کو جنسی رخ دینے کی کوشش کرتا رہا۔

’’نام نہاد صحافی وجاہت کاظمی جو خود کو انٹرنیشنل صحافی ظاہر کرتا ہے‘‘


عامرہ ہاشم نے مزید لکھا کہ جب وجاہت کاظمی اپنے مذموم مقاصد میں ناکام ہوا تو اس نے مجھے پیسے ادا کرنے کی پیشکش کی اور ساتھ ہی میرے بینک اکاؤنٹ، اے ٹی ایم کارڈ سمیت مکمل معلومات فراہم کرنے کا تقاضہ کیا لیکن میں نے اس جھوٹے شخص کو یہ معلومات فراہم کرنے سے انکار کردیا۔

’’عامرہ ہاشم اور وجاہت کاظمی کے درمیان کام سے متعلق ہونے والی  ابتدائی گفتگو کا سکرین شارٹ‘‘


عامرہ ہاشم نے اپنے ساتھ پیش آنے والے واقعے پر نہ صرف آواز بلند کی ہے بلکہ وجاہت کاظمی نامی نام نہاد صحافی کو بے نقاب کرنے کیلئے اس کی طرف سے آنے والے تمام پیغامات بھی شیئر کیے ہیں۔ ایکسپریس ٹربیون کا کہنا ہے کہ 6 دسمبر کی دوپہر 3 بجے کے قریب عامرہ ہاشم کا آرٹیکل شائع کیا گیا جس کے بعد وجاہت کاظمی نامی مکار شخص نے اپنا ٹوئٹر، فیس بک، انسٹا گرام اور دیگر سوشل میڈیا اکاؤنٹس ڈیلیٹ کردیے ہیں۔

’’نیچے دیے گئی تصاویر عامرہ ہاشم اور وجاہت کاظمی کے درمیان ہونے والی گفتگو کے سکرین شارٹس ہیں جن میں نام نہاد صحافی نے اپنی اصلیت کھل کر بیان کردی‘‘

اپنی رائے کا اظہار کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *