بھارت میں کرنسی نوٹوں کے ساتھ ایسا کام شروع کہ حکومت چکرا کر رہ گئی

Bharat Men Naye Or Purane Currency Noton Ki Black Mein Farokht

بھارت میں نئے اور پرانے کرنسی نوٹوں کی بلیک میں فروخت اور کاروبار میں ملوث افراد کے خلاف کارروائی کا سلسلہ جاری ہے، بھارت کا محکمہ انکم ٹیکس اور پولیس اب تک اربوں روپے کی نئی اور پرانی کرنسی مختلف شہروں سے برآمد کرچکی ہے۔ بھارت میں جاری کرنسی بحران کے باعث لاکھوں اور کروڑوں روپے کے نئے اور پرانے نوٹوں کی برآمدگی کا سلسلہ جاری ہے، بھارتی شہر بنگلور میں ایک گھر کے باتھ روم سے پانچ کروڑ 70 لاکھ روپے برآمد ہوئےجس میں نئے اور پرانے کرنسی نوٹ شامل ہیں، اس کے علاوہ 28 کلو سونے کے بسکٹس اور 4 کلو سونے کے زیورات بھی برآمد کیے گئے ہیں۔

بھارتی شہر چنئی سے 24 کروڑ روپے برآمد کیے گئے جو تمام دو ہزار کے نئے نوٹوں پر مشتمل ہیں،،بھارتی شہر حیدرآباد میں پوسٹ آفس کے عہدے دار کے پاس سے 65 لاکھ روپے کے نئے کرنسی نوٹ ضبط کیے گئے جو دو ہزار روپے کے نوٹوں پر مشتمل ہیں، بھارتی شہر کتور میں گاڑیوں کی چیکنگ کے دوران تقریباً 82 لاکھ روپے ضبط کیے گئے جن میں 71 لاکھ روپے 2000 روپے کے نئی کرنسی نوٹوں پر مشتمل ہیں۔ نئی دلی کے علاقے گریٹر کیلاش کی ایک کوٹھی سے تقریباً دس کروڑ روپے برآمد کیے گئے۔ ان میں تقریباً ڈھائی کروڑ نئی کرنسی پر مشتمل ہیں جبکہ باقی ساڑھے سات کروڑ روپوں میں 10، 50 اور 100 روپے کے نوٹ شامل ہیں، دلی کی اس کوٹھی کی الماری، اٹیچی ، ٹوکریوں غرض ہر جگہ سے صرف کیش ہی کیش ملا :-

اپنی رائے کا اظہار کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *