جنید جمشید کے بیٹے کی سوشل میڈیا پوسٹ نے سب کو رنج و غم میں مبتلا کر دیا !

58

جنید جمشید کی طیارہ حادثہ میں موت کے بعد جہاں عوام نے انکے گانے اور نعتیں اپ لوڈ کیں وہیں ان کے بیٹے نے ایک ایسا معلوماتی ذخیرہ  شئیر کیا جو ان کے اپنے والد کے بارے میں اہم انکشاف کے ثبوت کے طور پر پیش کیا جا سکتا ہے۔ تیمور جنید کے لیے جنید جمشید ایک سنگر، مذہبی رہنما یا بزنس مین نہیں بلکہ ایک گھر کے فرد تھے۔ انہوں نے اپنے پیغام میں لکھا: میرے بابا میرے لیے میرے ابو سے بڑھ کر کچھ نہیں تھے۔ وہ جب گھر آتے ہمیں بہت خوشی ملتی  اور ہم ان کو ملنے کے لیے بھاگ کر جاتے۔ پھر ہم اپنی دوسری مصروفیات میں لگ جاتے کیونکہ ہمیں معلوم ہوتا کہ وہ گھر پر ہی ہیں۔ اگر ہمیں ملنا ہوا یا بات کرنی ہوئی وہ یہیں موجود ہوں گے۔ وہ اپنے بابا کی دوسرے لوگوں کے بارے میں پریشان ہونے کی عادت کو بھی یاد کرتے ہوئے کہتے ہیں۔ ان کے جنازہ پر آنے والے دنیا بھر کے لوگ بتاتے ہیں کہ جنید جمشید ان سے اکثر رابطہ کرتے ۔ بابا انہیں فون کرتے ، مسیج کرتے اور ان کے بارے میں فکرمند رہتے۔ وہ اس لیے ایسا کرتے کہ لوگوں کو معلوم ہو کہ جنید جمشید ان کی کتنی فکر کرتے ہیں اور ان کے لیے دعائیں کرتے ہیں۔ تیمور جنید کو یہ اندازہ ہو چکا ہے کہ اگرچہ جنید جمشید ان کے ابو تھے لیکن وہ دوسرے بہت سے لوگوں کے لیے بھی بہت اہم شخصیت تھے:۔

اپنی رائے کا اظہار کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *