عیسائیوں میں کتنے فرقے ہیں اور کیا ہر فرقہ الگ کرسمس مناتا ہے؟ تفصیل جانئے

_9

ہر مذہب میں خوشی کے دن ہوتے ہیں اور عیسائیوں کے لیے خوشی کا دن حضرت عیسیٰ کی ولادت کا دن ہے ۔کرسمس دو الفاظ کا مرکب ہے christ حضرت عیسیٰ علیہ السلام مسیح اور mass عوام ،اجتماع ،اکھٹے ہونا کو کہتے ہیں ۔کرسمس کا مطلب ہوا مسیح کے لیے اکھٹے ہونا۔ یہ لفظ کرسمس چوتھی صدی عیسوی میں ملتا ہے ۔یعنی کرسمس چوتھی صدی سے باقاعدہ طور پر منائی جانی شروع ہوئی ،کرسمس کے علاوہ اسے نوائل ،یول ڈے نیٹوی کے ناموں سے دنیا میں اور پاکستان میں بڑا دن کے نام سے جانا جاتا ہے ۔یہ مسیحوں کی عید کا دن ہوتا ہے ۔25دسمبر کو پوری دنیا میں مسیحی برادری مذہبی جوش وجذبے سے کرسمس ڈٖے منا تی ہے۔

عیسائیوں میں اس دن کو منانے میں بھی تضاد پایا جاتا ہے۔ مختلف فرقے جو عیسائیت میں ہیں۔ ان کے دن بھی الگ الگ ہیں ۔ مثلاََ25َ دسمبر کو رومن کیتھولک اور پروٹیسٹنٹ کلیسائی ،6 جنوری کو مشرقی آرتھوڈوکس کلیسائی،اور 19 جنوری کو ارمینیا کلیسائی مناتے ہیں ۔ایک بات درست ہے کہ حضرت عیسیٰ علیہ اسلام کی درست تاریخ پیدائش کا تعین ممکن نہیں ہے ۔کہا جاتا ہے کہ حضرت عیسیٰ علیہ السلام کی ولادت سے پہلے 25 دسمبر ایک مقدس دن کے طور پر آفتاب پرستوں میں منایا جاتا تھا ۔قرآن پاک میں سورۃ مریم کے مطابق حضرت عیسیٰ ؑ کی ولادت کھجوروں کے موسم میں ہوئی جو کہ فلسطین میں مئی تا اگست ہوتا ہے۔اور انجیل مقدس کے مطابق ایسا موسم جب گڈریے اس رات بھیڑوں کو لیے بیت اللحم میں لیے ہوئے تھے ،اس سے بھی ایسا موسم خیال میں آتا ہے۔
جب سردی یا بارش نہ ہو بلکہ گرمایا بہار کا موسم ہو ۔یہ توسب ہے ایک بات اور بھی کہ جیسا کہ ہم سب جانتے ہیں کہ موسم رفتہ رفتہ بدل جاتے ہیں ۔ہر سال چند دن کا فرق پڑتا ہے شائد ولادت حضرت عیسیٰ علیہ السلام اسی تاریخ یا ماہ کو ہوئی ہو ۔اللہ کے نبی حضرت عیسیٰ ؑ کے ماننے والے دنیا بھر میں ہر سال 25دسمبر کو ان کی سالگرہ مناتے ہیں اور یہی دن ان کی عید کا ہوتا ہے، جس طرح ہم مسلمان عید پر ایک دوسرے کو تحفے تحائف دیتے ہیں اسی طرح مسیحی برادری بھی ایک دوسرے کو گفٹ دیتے ہیں ۔
نئے ملبوسات خرید کر پہنتے ہیں اور اپنے گھروں کے علاوہ چرچ میں عبادات کی جاتی ہیں، موم بتیاں روشن کی جاتی ہیں اور حضرت عیسیٰ کے حضور نذرانہ عقیدت پیش کیا جاتا ہے :۔

اپنی رائے کا اظہار کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *