اوباما نے تبت کو چین کا حصہ تسلیم کرلیا

obama1امریکی صدر براک اوباما کا کہنا ہے کہ چین کو دنیا کی دوسری بڑی معاشی طاقت اور تبت کو چین کا حصہ تسلیم کرتے ہیں۔
چین کے دارالحکومت بیجنگ میں ہونے والی ایشیا پیسیفک کانفرس میں چینی صدر شی جن پنگ کے ساتھ ملاقات کے بعد مشترکہ پریس کانفرنس کرتے ہوئے امریکی صدر براک اوباما کا کہنا تھا کہ چین کو دنیا کی دوسری بڑی معاشی طاقت مانتے ہیں اور چین کے ساتھ تجارت کو بڑھانے کی خواہش ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ امریکا ایشیائی ممالک سے مستحکم تعلقات چاہتا ہے اور چین کے ساتھ مختلف شعبوں میں معاہدے کریں گے اور چین کے ساتھ تعلقات کو مستحکم کریں گے۔
براک اوباما کا کہنا تھا کہ ہانگ کانگ میں ہونے والے مظاہروں میں امریکا کا کوئی عمل دخل نہیں ہے اور ہانگ کانگ کے معاملے پر مذاکرات کے حامی ہیں، ہانگ کانگ میں شفاف الیکشن ہونے چاہیں ۔ ان کا کہنا تھا کہ امریکا گرین ہاؤس گیس اخراج میں کمی اور دہشت گردی اور داعش سے متعلق چین کے اقدامات کو سراہتا ہے اس کے علاوہ چین کو تبت کو چین کا حصہ تسلیم کرتے ہیں۔

اپنی رائے کا اظہار کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *