بیگم جان: فلم ری ویو

ایس ایم اشعر

SM asher

حال ہی میں ریلیز فلم بیگم جان ایک طویل انتظار کے بعد آخر کار سینما حال کی زینت بن ہی گئی۔ نیشنل ایوارڈ ونر Surbajeet Murkejee اس فلم کے اسٹوری، اسکرین پلے، ڈائیلاگ اور ڈائریکشن کے تخلیق کار ہیں جو کہ اس سے پہلے اسی فلم کو بنگالی میں راج کہنی کے نام سے بنا چکے ہیں۔ اس فلم کی نمایاں کاسٹ میں ودھیا بالن، نصیر الدین شاہ،گوہر خان،رجت کپور، اشیش وگریانی اور چنکی پانڈے شامل ہیں۔
اس سے پہلے ودیا بالن کہانی ، بھول بھلیا، نو ون کل جیسکا ، عشقیا اور ڈرٹی پکچر میں متفرق کرداروں کو نبھاتے ہوئے اپنی کارکردگی سے مداحوں کے دل پر راج کر چکی ہیں۔ بیگم جان کے کردار کے ساتھ بھی انہوں نے پوری طرح انصاف کرتے ہوئے ایک بار پھر اپنے پرستاروں کو ’’اولالہ اولالہ‘‘ کرنے پر مجبور کر دیا ہے۔ مگر ساتھ ہی ان کے فنی کیرئر پر ایک سوالیہ نشان بھی آ جاتا ہے کہ مستقبل میں ودیا بالن کون سے کرداروں کو نبھاتی دکھائی دیں گی؟
فلم کی کہانی ایک کوٹھے کے گرد گھومتی نظر آتی ہے جو کہ پارٹیشن کے دور میں انڈیا اور پاکستان کی سرحد پر واقع ہے۔اس کوٹھے کو ودھیا بالن معاشرے کی ٹھکرائی ہوئی لڑکیوں کے ساتھ چلاتی ہیں اور اپنی آخری سانس تک یہ ساری طوائفیں اس کوٹھے کو خالی نہیں کرتیں۔بیگم جان شروع سے لے کرآخر تک ایک بہت لاؤڈ فلم میں جس کا اسکرپٹ انتہائی کمزور اور ضرورت سے زیادہ بے باک نظر آتا ہے۔

begumفلم کے پہلے ہالف میں موضوع کو بلا وجہ کھینچا گیا ہے ساتھ ہی ڈائریکٹر سیٹ پر ایک کوٹھے کی منظر کشی کرنے میں بھی پوری طرح ناکام نظر آتا ہے۔فلم میں گانوں کی بے محل آمد اور معیاری میوزک کی کمی نے فلم کے مضمون کو اور کمزور بنا دیا ہے۔نصیر الدین شاہ جیسے لیجنڈری اداکار فلم میں ایک چھوٹا سا کردار نبھاتے نظر آتے ہیں کو شائقین کی سمجھ سے بالکل باہر ہے۔گوہر خان کی اگر بات کی جائے تو اس فلم میں انہوں نے ایک پنجابی طوئف کا کردار ادا کیا ہے جس کے ساتھ وہ بھرپور کوشش کے باجود بھی انصاف نہیں کر سکیں۔جبکہ اس سے پہلے وہ فلم عشق زادے میں اس سے ملتے جلتے کردار میں اپنا لوہا منوا چکی ہیں۔ رجت کپور اور اشیش اس کوٹھے کو خالی کرانے کی ایک اچھی کوشش کرتے نظر آتے ہیں مگر فلم کی کہانی کی اس وقت سمجھ نہیں آتی کہ جب پاکستان اور ہندوستان کے یہ دو بڑے سرکاری عہداداران اس کوٹھے کو خالی کرانے کے لئے ایک بڑے بدمعاش کی مدد مانگتے ہیں۔اس بدمعاش کا کردار چنکی پانڈے نے ادا کیا جو ایک طویل مدت کے بعد بڑی اسکرین پر اپنی اداکاری کا جوہر دکھاتے ہوئے نظر آئے۔اگر دیکھا جائے تو اس فلم میں چنکی پانڈے کا کردار تشویشناک اور غیر ضروری ہے۔
15 کروڑ کی لاگت سے بنی اس فلم کے ساتھ بہت زیادہ توقعات کی جا رہیں تھیں کہ یہ باکس آفس پر چھا جائے گی لیکن کمزور اسکرپٹ، ناقص ڈائریکشن، بے محل موسیقی،غیر ضروری کردار اور انتہائی بے باک ڈائیلاگ کی وجہ سے یہ فلم شائقین کی توقعات پر اس طرح پوری نہیں اتر سکی جس طرح کی اس سے امیدیں وابستہ تھیں۔

اپنی رائے کا اظہار کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *