کین وڈ کے اشتہار میں ایسا کیا تھا کہ کمپنی نے معذرت کرلی!

اسکرین شاٹ

الیکٹرک مصنوعات بنانے والی ملٹی نیشنل کمپنی’کین ووڈ‘ نے پاکستانی ناظرین کے لیے بنائے گئے واشنگ مشین کے متنازع اشتہار پر معذرت کرلی۔ کین ووڈ کمپنی نے اپنے بیان میں کہا کہ ایک برانڈ کی حیثیت میں انہوں نے ہمیشہ سچ اور حقیقت پر مبنی اشتہار دینے کی کوشش کی ہے، جس میں تھوڑی بہت تفریح بھی شامل ہوتی ہے۔

کمپنی کی جانب سے جاری کیے گئے دستبرداری بیان میں کہا گیا کہ کین ووڈ کے واشنگ مشین کے اشتہار کی وجہ سے صارفین کو پہنچنے والی تکلیف پر کمپنی معذرت خواہ ہے۔ بیان میں تسلیم کیا گیا کہ اپنی کریئٹو ایجنسی کی جانب سے تیار کردہ اشتہار پر کمپنی مکمل طرح سے غور کرنے میں ناکام رہی،اور ہم تسلیم کرتے ہیں کہ ہماری جانب سے کیا گیا فیصلہ غلط تھا۔

خیال رہے کہ کمپنی نے اشتہار کی ویڈیو کو سوشل میڈٰیا تر تنقید کا نشانہ بنائے جانے کے بعد معزرت کی، اور کہا کہ ہم اپنے صارفین سے معزرت کرتے ہوئے درخواست کرتے ہیں کہ اس اشتہار کو مزید سوشل میڈیا پر نہ پھیلایا جائے۔ کین ووڈ نے فیس بک پیج مالکان کو بھی کہا کہ وہ آئندہ اس طرح کے اشتہارات شیئر کرنے سے پہلے اس بات کی آگاہی ضرور کرلیں کہ تیار کیے جانے والے تمام اشتہارات نشر کے لیے نہیں ہوتے۔

کین ووڈ کے اشتہار میں بولی وڈ اداکار نواز الدین صدیقی کو اپنے گھر میں اپنے دوستوں کے ساتھ گپے مارنے میں مصروف دکھایا گیا ہے، جب کہ اشتہار کا آغاز ہی ان کے زور زور سے مسکرانے سے ہوتا ہے۔

اشتہار میں نواز الدین صدیقی سے دوست ان کی بیوی سے متعلق پوچھتے ہیں کہ وہ کہاں ہے؟ جس کے جواب میں وہ دوستوں کو کہتے ہیں کہ آپ کو تو پتہ ہی ہے کہ مجھ سے نخرے برداشت نہیں ہوتے، اس لیے کل رات کو معمولی بات پر ان کا اور ان کی اہلیہ کا جھگڑا ہوگیا۔

نواز الدین صدیقی بات کو آگے بڑھاتے کہتے ہیں کہ انہیں غصہ آگیا، اور انہوں نے ’ہاتھ اٹھاکر اپنی بیوی کی دھلائی کی‘، جس پر ان کے دوست حیران ہوکے پوچھتے ہیں کہ کیا واقعی تم نے ایسا کیا؟۔

اس سے پہلے کہ نواز الدین صدیقی انہیں یقین دلانے کے لیے کوئی جملہ بولتے، ایک دوست نے نہایت شریفانہ انداز میں دوسری طرف دیکھتے ہوئے نہایت ادب و احترام سے کہا’ السلام علیکم بابھی‘، جس پر نواز الدین صدیقی ڈر کے مارے چلا اٹھے، اور ان کے گود میں پڑے پاپ کارن گر پڑے۔

بیوی کا نام سنتے ہی ڈر جانے والے نوازالدین صدیقی نے دوستوں کو کہا کہ’ایسے مذاق نہیں کیا کرو، ان کی سانس رک گئی تھی‘۔

سوشل میڈیا پر اس اشتہار کو اس لیے تنقید کا نشانہ بنایا گیا کہ اس میں گھریلو تشدد کو پروموٹ کرنے سمیت خواتین سے متعلق فرسودہ باتیں کی گئیں۔ خیال رہے کہ اس سے پہلے بھی کین ووڈ کے ایک اشتہار میں نواز الدین صدیقی کا سوشل میڈیا پر مذاق اڑایا گیا تھا۔

اشتہار میں دکھایا گیا تھا کہ نوازالدین اور عائشہ ایک تقریب سے گھر واپس آئے ہیں، جب عائشہ نے ان سے ایک تقریب میں موجود ایک جوڑے کی تعریف کرتے ہوئے سوال کیا تو نواز نے کچھ ایسا کہا جو شاید انہیں اپنی اہلیہ کے سامنے نہیں کہنا چاہیے تھا، جس کے بعد انہیں اے سی کے ٹھنڈے کمرے میں بھی پسینے آنے لگے :-

اپنی رائے کا اظہار کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *